Friday , January 19 2018
Home / سیاسیات / مانجھی کابینہ کے 7 وزراء جے ڈی یو سے معطل

مانجھی کابینہ کے 7 وزراء جے ڈی یو سے معطل

پٹنہ ۔ 17 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) جنتا دل (یو) نے بہار میں آج اپنی صفوں سے 7 وزراء کو چیف منسٹر جیتن رام مانجھی سے وفاداری کی بناء معطل کردیا جبکہ 20 فروری کو انہیں ایوان اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش کا سامنا ہے۔ اسمبلی میں پارٹی چیف وہپ شراون کمار نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ جے ڈی (یو) کے ریاستی صدر بسشٹ نرائن سنگھ نے پارٹی کے قو

پٹنہ ۔ 17 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) جنتا دل (یو) نے بہار میں آج اپنی صفوں سے 7 وزراء کو چیف منسٹر جیتن رام مانجھی سے وفاداری کی بناء معطل کردیا جبکہ 20 فروری کو انہیں ایوان اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش کا سامنا ہے۔ اسمبلی میں پارٹی چیف وہپ شراون کمار نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ جے ڈی (یو) کے ریاستی صدر بسشٹ نرائن سنگھ نے پارٹی کے قومی صدر شرد یادو سے منظوری حاصل ہونے کے بعد سات وزراء کو معطل کردیا ہے۔ سات معطل وزراء نریندر سنگھ ، بریشن پٹیل ، شاہد علی خان، سمراٹ چودھری ، نتیش مشرا، مہاچندر پرساد سنگھ اور بھیم سنگھ ہیں۔ وزیر فنون اور ثقافت ونئے بہاری آزاد رکن اسمبلی ہیں۔ جے ڈی یو پہلے ہی مانجھی کو پارٹی سے خارج کرچکی ہے جس کے بعد اسپیکر اسمبلی اُدے نرائن چودھری نے انہیں غیروابستہ رکن قرار دیا ہے۔ شراون نے کہا کہ اس معطلی کے بارے میں فیصلہ اس وقت کیا گیا

جب ساتوں وزراء مانجھی کابینہ سے مستعفی ہوجانے پارٹی کی ہدایت کی تعمیل میں ناکام ہوگئے۔ دریں اثناء مانجھی اور ان کے گرو سے دشمن بن جانے والے نتیش کمار کے حریف کیمپوں نے علحدہ مشاورتیں منعقد کئے جس میں ان کے حامیوں نے اپنی اپنی حکمت عملیوں کو قطعیت دی جبکہ بی جے پی اپنے ارادوں کے افشاء سے گریزاں ہے۔ سابق چیف منسٹر نتیش کمار سینئر پارٹی قائدین کے ساتھ مسلسل مشاورتوں میں مصروف رہے، جو دن بھر ان سے ملاقات کیلئے ان کی 7 سرکولر روڈ قیامگاہ آتے رہے۔ جے ڈی یو ایم ایل سی بینود سنگھ نے اپنی پارٹی کے نتیش کمار کے حامی ایم ایل ایز کے علاوہ، آر جے ڈی، کانگریس لیجسلیٹرس اور ایک آزاد ایم ایل اے کیلئے ڈنر کا اہتمام کیا۔ جے ڈی (یو) ذرائع نے کہا کہ اسی طرح کا ڈنر کل سینئر لیڈر وجئے چودھی کی قیامگاہ اور پھر 19 فروری کو نتیش کمار کی قیامگاہ پر ترتیب دینے کا پروگرام ہے۔

TOPPOPULARRECENT