Friday , January 19 2018
Home / سیاسیات / مانجھی کو بی جے پی کی تائید سے کوئی فائدہ نہیں : نتیش

مانجھی کو بی جے پی کی تائید سے کوئی فائدہ نہیں : نتیش

پٹنہ17 فروری (سیاست ڈاٹ کام) بہار میں چیف منسٹر جتن رام مانجھی کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے افراتفری کی کیفیت پیدا کرنے پر جنتا دل (یو) سینئر لیڈر نتیش کمار نے بی جے پی کو شدید تنقیدوں کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے گورنر کی جانب سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کیلئے مانجھی کو دی گئی 14 دن کی مہلت کو منصفانہ قرار دینے زعفرانی پارٹی کے موقف پر بھی نکتہ

پٹنہ17 فروری (سیاست ڈاٹ کام) بہار میں چیف منسٹر جتن رام مانجھی کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے افراتفری کی کیفیت پیدا کرنے پر جنتا دل (یو) سینئر لیڈر نتیش کمار نے بی جے پی کو شدید تنقیدوں کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے گورنر کی جانب سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کیلئے مانجھی کو دی گئی 14 دن کی مہلت کو منصفانہ قرار دینے زعفرانی پارٹی کے موقف پر بھی نکتہ چینی کی۔ انہوں نے کہا کہ 2000ء میں انہیں اکثریت ثابت کرنے کیلئے صرف 7 دن کی مہلت دی گئی تھی۔ اس وقت جنتا دل(یو)، سمتا پارٹی، بی جے پی، ایل جے پی اور آزاد ارکان پر مشتمل اتحاد نے 324 رکنی بہار اسمبلی (جھارکھنڈ کی تشکیل سے قبل) میں 152 نشستوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔ اس وقت آر جے ڈی ارکان کی تعداد 152 سے کم تھی۔ نتیش کمار کو اندرون 7 یوم ایوان میں اکثریت ثابت کرنے کیلئے کہا گیا تھا لیکن وہ مقررہ وقت میں درکار تائید حاصل نہیں کرپائے اور تحریک اعتماد سے قبل ہی انہوں نے استعفیٰ دے دیا تھا۔ جتن رام مانجھی کو جنتا دل (یو) نے چیف منسٹر کا عہدہ چھوڑنے سے انکار پر پارٹی سے برطرف کردیا گیا۔ اس کے باوجود وہ اس عہدہ پر برقرار ہیں اور اکثریت کی تائید حاصل ہونے کا انہوں نے دعویٰ کیا ہے۔نتیش کمار نے کہا کہ اگرچہ مانجھی کو بی جے پی کی تائید حاصل ہے، پھر بھی وہ اکثریت ثابت نہیں کرسکتے۔

TOPPOPULARRECENT