Wednesday , December 12 2018

مانسون میں ملیریا ، ڈینگو ، ٹائیفائیڈ کی دستک

ناندیڑ شہر میں گندگی اور غلاظت سے وبائی امراض پھوٹ پڑنے کا خطرہ

ناندیڑ شہر میں گندگی اور غلاظت سے وبائی امراض پھوٹ پڑنے کا خطرہ
ناندیڑ ۔ 25 جولائی ۔ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ناندیڑ شہر میں جہاں مانسون میں مختلف امراض نے اپنے پیر پھیلانا شروع کردیا ہے وہی مچھروں کی بہتات نے ملیریا ، ڈینگو ، ٹائیفائیڈ جیسے مرض پھیلنے کے خدشات میں اضافہ کیا ہے۔ وہیں ناندیڑ بلدیہ عظمیٰ ان بیماریوں سے روک تھام میں پوری طرح نا کام نظر آرہاہے۔ناندیڑ شہر کے بیشتر علاقوں میں جابجا گندگی اور ڈرینج لائن میں شگاف پڑنے کے باعث چھوٹے چھوٹے گندے پانی کے تالاب کھڑے نظر آرہے ہیں۔ وہیں شہر کے بیشتر علاقوں میں بارش کے پانی کی مناسب نکاسی نہیں کئے جانے کے سبب شہر کے بیشتر نشیبی علاقوں میں پانی کی جھیل کھڑی نظر آرہی ہے، ان جگہوں پر ہی اکثر و بیشتر مچھروں کی فزائش و بہتات ہوتی ہے۔ مچھر کے کاٹنے سے ہونے والی سب سے خطرناک اور جا لیوا بیماری ڈینگو ، بخار دیگر شہروں کی طرح اب ناندیڑ میں یہ وباء پوری طرح داخل ہونے کے خدشات میں اضافہ ہوا ہے۔ ناندیڑ ضلع میں ڈینگو وباء کے اضافہ ہونے کے خدشات کے باعث عوام سخت پریشان ہیں۔ ڈینگو پر قابو پانے میں ضلع انتظامیہ پوری طرح ناکام نظر آرہا ہے۔ گزشتہ برس ایک نوجوان شخص کی طبیعت خراب ہونے کے باعث اُسے سرکاری اسپتال میں داخل کیا گیا تھا،جانچ رپورٹ میں پتہ چلا کہ یہ نوجوان ڈینگو کا شکار بنا ہے۔ لیکن سرکاری اسپتال کے ڈاکٹروں کی بروقت کی گئی طبی نگہداشت کے باعث جان لیوا بیماری سے یہ نوجوان چھٹکارا پانے میں کامیاب رہا۔ اس کے بعد اسپتال اور ضلع انتظامیہ لاپرواہ ہوگیا ۔ ناندیڑ شہر کے باشعور شہریان نے چند دنوں قبل شہر میں جگہ جگہ جمع پانی اور گندگی کے مسئلے کو اُٹھاتے ہوئے ڈینگو سمیت دیگر بیماریوں کے پھیلنے کا خدشہ ظاہر کیا تھا اور انتظامیہ سے ڈی ڈی ٹی چھڑا ئو کرانے کا مطالبہ کیا تھا لیکن اس کا کوئی اثر نہیں ہوا ۔ اب شہر میں ان جگہوں پر پلنے والے ڈینگو مچھروں نے اپنا اثر دکھانا شروع کردیا ہے۔ شہریان ناندیڑ کی جانب سے ضلع انتظامیہ سے مطالبہ کیا جارہا ہے کہ وہ شہر کے بیشتر علاقوں میں ڈی ڈی ٹی چھڑکائو کرائیں اور ٹھہرے ہوئے پانی کی نکاسی کیلئے جلد از جلد مناسب و ٹھوس اقدامات کو روبہ عمل لائے۔

TOPPOPULARRECENT