Thursday , June 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ماؤسٹوں کی سرگرمیوں کو روکنے کی ستائش

ماؤسٹوں کی سرگرمیوں کو روکنے کی ستائش

عادل آباد 12 ڈسمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع عادل آباد میں ماؤسٹوں کی سرگرمیوں کو ناکام بنانے پر کریم نگر رینج انچارج ڈی آئی جی مسٹر بی ملاریڈی نے پولیس خدمات کی بھرپور ستائش کرتے ہوئے عوام کے ساتھ بہتر مراسم بنائے رکھنے پولیس کو ہدایت دی۔ ڈی آئی جی مسٹر بی ملاریڈی ضلع عادل آباد کے دورہ کے موقع پر مستقر عادل آباد کے پولیس پریڈ گ

عادل آباد 12 ڈسمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع عادل آباد میں ماؤسٹوں کی سرگرمیوں کو ناکام بنانے پر کریم نگر رینج انچارج ڈی آئی جی مسٹر بی ملاریڈی نے پولیس خدمات کی بھرپور ستائش کرتے ہوئے عوام کے ساتھ بہتر مراسم بنائے رکھنے پولیس کو ہدایت دی۔ ڈی آئی جی مسٹر بی ملاریڈی ضلع عادل آباد کے دورہ کے موقع پر مستقر عادل آباد کے پولیس پریڈ گراؤنڈ میں پولیس جوانوں کی جانب سے پیش کردہ کرتب کا جہاں ایک طرف مشاہدہ کیا وہیں دوسری طرف پولیس جوانوں سے سلامی بھی لی۔ جبکہ اس موقع پر ضلع ایس پی مسٹر ترون جوشی بھی موجود تھے۔ عادل آباد، بیلم پلی، ایڈیشنل ایس پی مسرز ٹی پاناسا ریڈی، بھاسکر بھوشن، ڈی ایس پیز میں مسرز لکشمی نارائنا، وینکٹیشورلو، سرینواسلو، رمنا ریڈی، کے پروین کمار، آر آئی مسرز جیمس، ویراپا کو مشورہ دیا کہ وہ جرائم پر قابو پانے مکمل اقدامات کریں۔ عادل آًاد ڈی ایس پی مسٹر اے لکشمی نارائنا مستقر عادل آباد کے لکشمی ریسڈنسی ہوٹل میں بینک عہدیداروں کا ایک علیحدہ اجلاس طلب کرتے ہوئے بینک کے اے ٹی ایم سنٹر پر حفاظتی انتظامات کے طور پر سکیورٹی متعین کرنے بینک عہدیداروں کو ہدایت دی۔ بینک اور اے ٹی ایم سنٹر پر اکثر و بیشتر پیش آنے والی سرقہ کی وارداتوں پر کڑی نظر رکھنے سی سی کیمرے نصب کرنے کا بھی مشورہ دیا۔ بعدازاں میڈیا سے مخاطب ہوکر عادل آباد میں بے قاعدہ ٹریفک پر قابو پانے کی غرض سے پولیس کو جہاں ایک طرف متحرک کیا گیا وہیں دوسری طرف ہر روز دو گھنٹے شام پانچ بجے تا سات بجے مختلف چوراہوں پر پولیس کی جانب سے تلاشی لی جارہی ہے۔ گزشتہ ایک دن میں 150 کیس جن میں موٹر سیکل سوار، آٹو ڈرائیورس و دیگر سواریوں کے چلانے والے افراد پر درج کرتے ہوئے جرمانہ کیا گیا۔ جرائم کی روک تھام کی خاطر مستقر عادل آباد کے دونوں پولیس اسٹیشنوں کو چار حصوں میں منقسم کرتے ہوئے پولیس طلایہ گردی میں اضافہ جہاں ایک طرف دیکھا گیا وہیں دوسری طرف صبح کی اولین ساعتوں میں 4.30 تا 5.30 بجے کے دوران عبادت گاہوں پر بھی پولیس جانچ کرے گی تاکہ کوئی غیر سماجی عناصر عبادت گاہوں پر پناہ حاصل نہ کرسکیں۔

TOPPOPULARRECENT