Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ماؤسٹ سرگرمیوں سے متاثرہ علاقہ جوڑے گھاٹ میں چیف منسٹر کا دورہ

ماؤسٹ سرگرمیوں سے متاثرہ علاقہ جوڑے گھاٹ میں چیف منسٹر کا دورہ

عادل آباد 7 اکٹوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع عادل آباد کے آصف آباد اسمبلی حلقہ کے کیرامری منڈل میں کومرم بھیم برسی تقریب میں شرکت کرنے کیلئے چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ جہاں ایک طرف خصوصی دلچسپی کا اظہار کررہے ہیں وہیں دوسری طرف پولیس، انٹلی جنس ماؤسٹوں کی سرگرمیوں کے پیش نظر چیف منسٹر کا دورہ ملتوی کرنے کی سفارش کرچکی ہے۔

عادل آباد 7 اکٹوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع عادل آباد کے آصف آباد اسمبلی حلقہ کے کیرامری منڈل میں کومرم بھیم برسی تقریب میں شرکت کرنے کیلئے چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ جہاں ایک طرف خصوصی دلچسپی کا اظہار کررہے ہیں وہیں دوسری طرف پولیس، انٹلی جنس ماؤسٹوں کی سرگرمیوں کے پیش نظر چیف منسٹر کا دورہ ملتوی کرنے کی سفارش کرچکی ہے۔ جوڈے گھاٹ جو ماؤسٹوں سے متاثرہ علاقہ تصور کیا جاتا ہے جہاں چیف منسٹر 8 اکٹوبر کو قبائیلی افراد کے جلسہ سے مخاطب ہوتے ہوئے قبائیلی قائد کومرم بھیم کی 74 ویں برسی میں شرکت کریں گے۔ جبکہ گزشتہ ماہ ضلع عادل آباد کے کاسی پیٹ اور تریانی منڈل کے گھنے جنگلات میں دو مرتبہ ماؤسٹوں اور پولیس کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ عمل میں آچکا ہے۔ پڑوسی ریاست مہاراشٹرا میں اسمبلی انتخابات کے پیش نظر مہاراشٹرا پولیس اپنے وسیع بندوبست کے تحت تمام راستوں پر کڑی نظر رکھنے کے علاوہ جابجا چیک پوسٹ قائم کرچکی ہے جس کی وجہ ضلع عادل آباد کے گھنے جنگلات میں ماؤسٹ پناہ لینے کا اندیشہ ہے۔ جبکہ ضلع عادل آباد کی سرحد مہاراشٹرا ریاست سے متصل ہے۔ 2007 ء میں کومرم بھیم برسی کے موقع پر کانگریس حکومت کے دوران تلنگانہ تحریک کے سربراہ مسٹر کے چندرشیکھر راؤ اور بی جے پی قائد مسٹر بنڈارو دتاتریہ جوڈے گھاٹ جانے بضد تھے جنھیں پولیس نے جوڑے گھاٹ سے 21 کیلو میٹر کے فاصلہ پر Hatti مقام پر روک لیا تھا۔ 2011 ء میں تلنگانہ جاگرتی سمیتی قائد شریمتی کویتا جو اب ضلع نظام آباد کی رکن پارلیمنٹ ہیں اُنھیں بھی Hatti مقام تک جانے کی اجازت نہیں دی گئی تھی۔

2001 ء میں جوڈے گھاٹ ماؤسٹوں کا اہم مقام تصور کیا جاتا تھا۔ اسی دوران ان علاقہ جات میں گشت کرنے والے عہدیداروں کو نقصان پہنچانے کی غرض سے بیشتر مقامات پر سڑکوں پر بارودی سرنگوں کو بچھایا تھا جس کو پولیس نے ناکام بنادیا۔ کومرم بھیم کی برسی اکثر و بیشتر Hatti مقام پر ہی منائی جاتی ہے۔ 8 اکٹوبر کو دوپہر میں چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندرشیکھر راؤ کی شرکت کو یقینی تصور کرتے ہوئے ضلع حکام کی جانب سے انتظامات کو قطعیت دی گئی ہے۔ وزیر جنگلات ماحولیات مسٹر جوگو رامنا، ضلع کلکٹر مسٹر ایم جگن موہن، ضلع ایس پی مسٹر گجا راؤ بھوپال کا دورہ کرتے ہوئے جلسہ گاہ، ہیلی پیاڈ کی تعمیر کے مقام کو قطعیت دی جاچکی ہے۔ جبکہ جوڈے گھاٹ میں کومرم بھیم ٹرائبل میوزیم کا بھی عارضی طور پر اہتمام کیا جارہا ہے۔ جوڈے گھاٹ اور Hatti کے گھنے جنگلات میں پولیس کی طلایہ گردی کے علاوہ کپرامری منڈل سے گزرنے والے راستوں پر پولیس کی جانب سے چیکنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ ضلع عادل آباد کی پولیس کے علاوہ دیگر اضلاع سے بھی پولیس کو طلب کرتے ہوئے ماؤسٹوں سے گھرے ہوئے اس علاقہ کو پولیس چھاؤنی میں تبدیل کردیا گیا ہے۔ ورنگل زون آئی جی مسٹر روی گپتا کریم نگر رینج ڈی آئی جی مسٹر آر بھیما نائک پولیس بندوبست کرنے میں اپنی خصوصی دلچسپی لئے ہوئے ہیں۔ ضلع ایس پی مسٹر گجا راؤ بھوپال کی اطلاع کے مطابق پانچ ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس، 15 ڈی ایس پی، 30 سرکل انسپکٹرس، 80 اے ایس آئی، ایک خاتون پولیس سرکل انسپکٹر، تین خاتون پولیس انسپکٹرس کے علاوہ کم و بیش دو ہزار پولیس جوانوں کو تعینات کردیا گیا ہے۔ پولیس کے لئے یہ انتظامات چیالنج سے کم نہیں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT