Wednesday , December 12 2018

متحدہ عرب امارات کیخلاف ویسٹ انڈیز کی آسان کامیابی

نیپئر 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام )آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے پول بی کے کلید میچ میں ویسٹ انڈیز نے متحدہ عرب امارات کو چھ وکٹ سے شکست دیدی ۔ اس طرح فاتح ٹیم کے کپتان جیسن ہولڈر کی قیادت میں بولرس کی شاندار کارکردگی نے اس ٹورنمنٹ میں اپنی ٹیم کی برقراری کی امیدواروں میں اضافہ کردیا ہے ۔ جیسن ہولڈر نے آج کے میچ میں متحدہ عرب امارات کی ٹیم کو 27 رن

نیپئر 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام )آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے پول بی کے کلید میچ میں ویسٹ انڈیز نے متحدہ عرب امارات کو چھ وکٹ سے شکست دیدی ۔ اس طرح فاتح ٹیم کے کپتان جیسن ہولڈر کی قیادت میں بولرس کی شاندار کارکردگی نے اس ٹورنمنٹ میں اپنی ٹیم کی برقراری کی امیدواروں میں اضافہ کردیا ہے ۔ جیسن ہولڈر نے آج کے میچ میں متحدہ عرب امارات کی ٹیم کو 27 رن دیکر چار وکٹس حاصل کیا ۔ انہوں نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا ۔ جیروم ٹیلر نے اپنی ٹیم کی کامیابی کی کوششوں میں کپتان کی مدد کی اور 36 رن کے عوض تین وکٹس حاصل کیا۔ اس طرح مک لین پارک میں ویسٹ انڈیز نے اپنی حریف ٹیم کو 47.4 اوورس مںی 175 رن پر آوٹ کردیا ۔ متحدہ عرب امارات میں لوور آرڈر کے بیٹسمین ناصر عزیز (60)اور امجد جاوید (56) ان کے ساتھ بہتر کھیل کا مظاہرہ کرسکے ۔ جس کے جواب میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم محض 30.3 اوورس میں کامیابی کا نشانہ حاصل کرلیا۔ ویسٹ انڈیم چھ کھیلوں میں تین میں کامیابی حاصل کی ہے اور دیگر تین میچوں میں اس کو شکست ہوئی ہے ۔ مقابلہ میں برقرار رہنے کیلئے ویسٹ انڈیز کو آج کے میچ میں کامیابی ضروری تھی لیکن

ان کے امکانات ہنوز پاکستان اور آئر لینڈ کے مابین مقابلہ کے نتیجہ پر منحصر ہیں۔ اس گروپ میں تیسرے اور چوتھے مقام کیلئے رن بنانے کی شرح کی بنیاد پر فیصلہ کیا جائے گا ۔ متحدہ عرب امارات کی ٹیم تمام چھ میچوں میں شکست کے ساتھ پہلے ہی ٹورنمنٹ میں خارج ہوچکی ہے ۔ متحدہ عرب امارات کے بیٹسمین ناقص کھیل کے سبب بہ آسانی آوٹ ہوگئے اور حریف ٹیم میں طوفانی اوپنر کرس گیل کی عدم موجودگی کے باوجود رمارات کے بولرس حریف بیٹسمین کیلئے کوئی مشکل پیدا نہیں کرسکے۔ جانسن چارلس صرف 40 گیندوں میں 9چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 55 رن بناسکے ۔ انہوں نے کامیابی کے ہدف کے تعاقب میں اچھی شروعات کی لیکن ڈیوائین اسمتھ اور مارلون سیمیولس جلد بہ آسانی آوٹ ہوگئے ۔ چارلس کے آوٹ ہونے کے بعد جوناتھن کارٹر نے اننگز کو سنبھال لیا اور 50 رن بناکر ناٹ آوٹ رہے ۔ انہوں نے دنیش رامدین 33 (ناٹ آوٹ) کے ساتھ اپنی ٹیم کو کامیابی سے ہمکنار کیا ۔ قبل ازیں ہولڈرنے بہترین بولنگ سے متحدہ عرب امارات کے بیٹسمین کو جلد آوٹ کیا

اور ٹیلر نے بھی متاثر کن بولنگ کی ۔ عزیز اور جاوید کے مابین ساتویں وکٹ کی ساجھیداری میں اگر سنچری نہ بنی ہوتی تو متحدہ عرب امارات کی ٹیم اور بھی بہت کم اسکور پر آوٹ ہوسکتی تھی ۔ ویسٹ انڈیم کے دونوں بولرس کھیل کی ابتداء میں 26 رن کے عوض پانچ وکٹ حاصل کرچکے تھے اور سواپنیل پاٹل کی شکل میں چھٹویں وکٹ حاصل ہوئی ۔ اس طرح 14 ویں اوور میں متحدہ عرب امارات کا اسکور چھ وکٹ کے نقصان سے محض 46 رن تھا تاہم عزیز اور جاوید نے احتیاط اور جارحیت کے امتزاج کے ساتھ ساتویں وکٹ کی ساجھیداری میں 107 کا اضافہ کیا جس کے ذریعہ انہو ںنے نہ صرف اپنی ٹیم کو کامیابی دلانے کی جدوجہد کی بلکہ اپنی اننگز کی عزت بچانے کی کوشش بھی کی ۔ تاہم ویسٹ انڈیز کی ٹیم اپنی حریف کو ممکنہ حد تک کم سے کم اسکور پر آوٹ کرنا چاہتی تھی اورانہوں نے بالآخر ایسا کر دکھایا۔ عزیز اور جاوید کے سوا متحدہ عرب امارات کے دیگر بیٹسمین کا مظاہرہ مایوس کن رہا ۔ ان دونوں کے بعد محمد نوید 14 واحد بیٹسمین تھے جن کا اسکور دو ہندسوں تک پہونچ سکا ۔

TOPPOPULARRECENT