Saturday , January 20 2018
Home / ہندوستان / متولی مولانا کلب جواد اور کاظم علی سبکدوش

متولی مولانا کلب جواد اور کاظم علی سبکدوش

لکھنو ۔ 7 ۔ جنوری : ( سیاست ڈاٹ کام) : شیعہ سنٹرل بورڈ آف وقفس اترپردیش نے 27 متولیوں بشمول مولانا کلب جواد اور کانگریس رکن اسمبلی نواب کاظم علی کو سبکدوش کردیا ہے جن کے ریاستی وزیر شہری ترقیات اعظم خاں کے ساتھ اختلافات پیدا ہوگئے تھے ۔ مولانا کلب جواد کو لکھنو میں واقع سجادیہ قدیم اور جدید امام باڑہ جھولال اور روئے سرکار کے متولی کی ذم

لکھنو ۔ 7 ۔ جنوری : ( سیاست ڈاٹ کام) : شیعہ سنٹرل بورڈ آف وقفس اترپردیش نے 27 متولیوں بشمول مولانا کلب جواد اور کانگریس رکن اسمبلی نواب کاظم علی کو سبکدوش کردیا ہے جن کے ریاستی وزیر شہری ترقیات اعظم خاں کے ساتھ اختلافات پیدا ہوگئے تھے ۔ مولانا کلب جواد کو لکھنو میں واقع سجادیہ قدیم اور جدید امام باڑہ جھولال اور روئے سرکار کے متولی کی ذمہ داری سے ہٹادیا گیا ہے ۔ بورڈ کے ایڈمنسٹریٹو آفیسر سید غلام سیدن رضوی نے آج یہ اطلاع دی اور بتایا کہ دو معاملت میں کلب جواد کے خلاف محکمہ جاتی تحقیقات کا حکم دیدیا گیا ہے ۔ علاوہ ازیں مزید چند ایک متولیوں ( نگرانکاروں ) کے خلاف تحقیقات کروائی جائے گی ۔ واضح رہے کہ شیعہ سنٹرل بورڈ آف وقفس کے امور میں کلب جواد اور اعظم خاں نے ایکدوسرے کے خلاف بدعنوانیوں کے الزامات عائد کئے ہیں ۔ کانگریس رکن اسمبلی نواب کاظم علی خاں جو کہ رامپور میں اعظم خاں کے کٹر حریف تصور کئے جاتے ہیں ۔ اوقاف کی ذمہ داری سے ہٹادیا گیا ہے ۔ بیشتر اوقافی جائیدادیں لکھنو ، بریلی ، رامپور ، بیجنور ، مظفر نگر اور میرٹھ میں واقع ہے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ مذکورہ مقامات پر نئے متولیوں یا انتظامی کمیٹیوں کا بہت جلد تقرر کیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT