Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / متھرا تشدد کی سی بی آئی تحقیقات کا حکم دینے سے سپریم کورٹ کا انکار

متھرا تشدد کی سی بی آئی تحقیقات کا حکم دینے سے سپریم کورٹ کا انکار

ریاستی تحقیقاتی ایجنسیاں موثر کام نہ کرنے کا کوئی ثبوت نہیں : تعطیلاتی بنچ ، یوپی حکومت لاء اینڈ آرڈر کے معاملے میں غیرسنجیدہ : کرن رجیجو

نئی دہلی ۔ 7 جون ۔(سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج متھرا میں تشدد کی سی بی آئی تحقیقات کا حکم دینے سے انکار کیا جس میں 29 افراد بشمول دو ملازمین پولیس ہلاک ہوگئے تھے ۔ جسٹس پی سی گھوش اور جسٹس امیتوا رائے پر مشتمل تعطیلاتی بنچ نے کہاکہ وہ اس معاملے میں کوئی حکم جاری نہیں کرسکتے اور درخواست گذار کو اس مسئلے کے حل کیلئے الہٰ آباد ہائیکورٹ سے رجوع ہونے کی ہدایت دی ۔ سماعت کے دوران سینئر وکیل گیتا لتھرا نے دہلی بی جے پی ترجمان اور وکیل اشونی اُپادھیائے کی طرف سے پیش ہوتے ہوئے کہا کہ شہر میں بڑے پیمانے پر تشدد ہوا ہے اور شواہد کو مٹایا جارہاہے ۔ انھوں نے کہاکہ سماج وادی پارٹی زیرقیادت یو پی حکومت سی بی آئی تحقیقات کی سفارش نہیں کررہی ہے اور ریاستی تحقیقاتی ایجنسیاں اپنا کام موثر ڈھنگ سے انجام نہیں دے رہی ہیں۔ اس پر بنچ نے کہا کہ آپ کی درخواست میں کہیں یہ ثبوت نہیں دیا گیا کہ ریاستی تحقیقاتی ایجنسیوں کی جانب سے کوئی لاپرواہی ہوئی ہے ۔

بنچ نے کہاکہ کسی ٹھوس ثبوت کے بغیر اگر یہ کہا جائے کہ ریاستی تحقیقاتی ایجنسیاں موثر طورپر کام نہیں کررہی ہیں تو عدالتیں اس میں مداخلت نہیں کرسکتیں ۔ بنچ نے درخواست گذار سے کہا کہ وہ اپنی درخواست سے دستبردار ہوجائیں اور اسے مسترد تصور کیا جائے گا ۔ سپریم کورٹ نے کل اس درخواست کی ہنگامی سماعت سے اتفاق کیا تھا اور کہا تھا کہ تشدد کی سنگین نوعیت کو دیکھتے ہوئے سی بی آئی تحقیقات ضروری ہے ۔ متھرا شہر میں 2 جون کو جب پولیس ناجائز قابضین کو ہٹانے کیلئے وہاں پہونچی تو اچانک ان قابضین اور پولیس کے مابین جھڑپ ہوگئی اور اس تشدد میں 29 افراد بشمول متھرا ایس پی مُکل دیویدی اور ایس ایچ او سنتوش کمار ہلاک ہوگئے ۔ پولیس الٰہ آباد ہائیکورٹ کے حکم پر ان قبضوں کو برخواست کرنے کیلئے یہاں پہونچی تھی اور جو لوگ جواہر باغ میں ناجائز قبضہ کئے ہوئے ہیں اُن کا تعلق آزاد بھارت ویدیک ویچارک کرانتی ستیہ گرہی سے ہے ۔ اُپادھیائے نے اپنی درخواست میں کہا تھا کہ عدالت ازخود اس معاملے کا نوٹ لیتے ہوئے سی بی آئی تحقیقات کا حکم دے سکتی ہے

کیونکہ اس واقعہ کی وجوہات اور حقائق کے ساتھ ساتھ عاملہ ، مقننہ اور ستیہ گرہی گروپ کے مابین گٹھ جوڑ کا پتہ چل سکے ۔ درخواست گذار نے ایسے معاملات میں مہلوکین کے ارکان خاندان کو معاوضہ کے تعلق سے یکساں پالیسی وضع کرنے کی ریاستی حکومت اور مرکز کو ہدایت دینے کی بھی خواہش کی تھی ۔ درخواست میں یہ دعویٰ کیا گیا تھا کہ مرکزی حکومت واقعہ کی سی بی آئی تحقیقات کیلئے تیار ہے لیکن اُترپردیش حکومت سی بی آئی تحقیقات کی سفارش کے معاملے میں سردمہری کا مظاہرہ کررہی ہے ۔ اس دوران مرکز نے سماج وادی پارٹی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اُترپردیش میں لاء اینڈ آرڈر کے مسئلے پر وہ سنجیدہ نہیں ہے ۔ مرکزی منسٹر آف اسٹیٹ اُمور داخلہ کرن رجیجو نے سنبھل (یوپی ) میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت کو لاء اینڈ آرڈر کے مسئلے پر سنجیدہ ہونا چاہئے لیکن اُس کے ارادے ٹھیک نہیں ہے ۔ اُنھوں نے کہا کہ وزارت اُمور داخلہ ریاستی حکومت کے ساتھ تعاون کرتی ہے اور اس معاملے میں کوئی امتیاز نہیں برتا جاتا ۔

TOPPOPULARRECENT