Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / متھرا میں ریاڈیکل اسلام پر بین الاقوامی کانفرنس

متھرا میں ریاڈیکل اسلام پر بین الاقوامی کانفرنس

18 نومبر کو کینیڈا، افغانستان، بنگلہ دیش اور دیگر ملکوں کے اسکالرس اور مندوبین کی شرکت
متھرا ۔15 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) متھرا میں 18 نومبر سے تین روزہ بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد عمل میں آرہا ہے۔ اس کانفرنس کا عنوان ’’عالمی سکیوریٹی اور ریاڈیکل اسلام ‘‘ ہے۔ کانفرنس میں ہندوستان، کینیڈا ، افغانستان، بنگلہ دیش اور دیگر ملکوں سے تعلق رکھنے والے مفکرین اسلام اور بندوبین شرکت کررہے ہیں۔ عالمی سلامتی اور ریاڈیکل اسلام پر تقاریر ہوں گی۔ پیرس میں اسلام اسٹیٹ کی جانب سے کئے گئے حالیہ حملے اور قتل عام ہماری کوششوں کی نشاندہی کرتا ہے کہ ہم ریاڈیکل اسلام پر بین الاقوامی کانفرنس منظم کریں اور اس بات کا پتہ چلایا جائے کہ آخر اس طرح کے قتل عام کو روکنے کے لئے کیا کیا جانا چاہئے۔ کانفرنس کے ڈائرکٹر ڈاکٹر پریتی جوہری نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آرسی گرلز پی جی کالج متھرا میں یہ کانفرنس آئی سی ایس ایس آر کے زیر اہتمام منعقد ہورہی ہے۔ اس عالمی کانفرنس میں جسٹس رجندر سچر جنہوں نے سچر کمیٹی کی قیادت کی تھی،

ڈاکٹر ظفر الاسلام (دیوبند)، امام عمر احمد الیاسی (آل انڈیا امام آرگنائزیشن)، طارق فتح (نامور مصنف)  اور کینیڈا سے تعلق رکھنے والے کالم نگار ، سابق چیف منسٹر جموں وکشمیر فاروق عبداللہ کے بشمول کئی ممتاز شخصیتیں شرکت کررہی ہیں۔ کانفرنس کے مباحث کئی ضمنی موضوعات پر منقسم ہوں گے۔ اسلام کو شدت پسند بنانے کی وجوہات اور اس کے ذمہ داروں سے نمٹنے کے طور طریقوں پر غور کیا جائیگا۔ انقلابی اسلام کا سامنا کرنے کے لئے جن چیزوں کی ضرورت ہے اس پر توجہ دی جائے گی۔ موجودہ صورتحال سے کس طرح نکلا جاسکے پر بھی غور کیا جائیگا۔ اسلام پسند نظریات کے حامل افراد میں بڑھتی انتہاپسندی کو نیا اسلام قرار دے کر عالمی سطح پر الگ شناخت پیدا کی جارہی ہے اور اس کے اثرات ہندوستانی مسلمانوں پر بھی مرتب ہورہے ہیں۔ اگرچہ کہ ہندوستان میں دہشت گرد حملوں کا موثر جواب دیا ہے، سمینار میں سفارشات بھی پیش کی جائیں گی اور دہشت گردی کے مرکب افراد کے خلاف کارروائی کرنے کے لئے رہنمایانہ خطوط بھی فراہم کئے جاسکتے ہیں۔ دہشت گرد حملے انسانیت کے بنیادی ڈھانچہ کو تباہ و تاراج کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT