Thursday , June 21 2018
Home / سیاسیات / مثالی نمونہ قائم کرنے کی کوشش، ہمخیال افراد سے رابطہ

مثالی نمونہ قائم کرنے کی کوشش، ہمخیال افراد سے رابطہ

نئی دہلی ۔ 21 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) عاپ سے اخراج کے ایک دن بعد یوگیندر یادو نے کہا کہ وہ ’’نیا نمونہ‘‘ تیار کرنے کی کوشش کریں گے اور ہم خیال افراد سے ربط پیدا کریں گے تاکہ تحریک کے جذبہ کو زندہ رکھ سکیں۔ یوگیندر یادو نے اروند کجریوال زیرقیادت پارٹی سے معذرت طلب کی کیونکہ وہ کارکردگی پر تنقید کی مہم چلا رہی ہے کہ انہوں نے پارٹی کی انتخ

نئی دہلی ۔ 21 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) عاپ سے اخراج کے ایک دن بعد یوگیندر یادو نے کہا کہ وہ ’’نیا نمونہ‘‘ تیار کرنے کی کوشش کریں گے اور ہم خیال افراد سے ربط پیدا کریں گے تاکہ تحریک کے جذبہ کو زندہ رکھ سکیں۔ یوگیندر یادو نے اروند کجریوال زیرقیادت پارٹی سے معذرت طلب کی کیونکہ وہ کارکردگی پر تنقید کی مہم چلا رہی ہے کہ انہوں نے پارٹی کی انتخابی ناکامی کیلئے سازش کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ دو ماہ تک آپ نے میرے خلاف زہریلی مہم چلائی اور کہا کہ میں پارٹی کی انتخابی ناکامی اور قومی کنوینر کے عہدہ سے کجریوال کی برطرفی کیلئے سازش کررہا تھا۔ جب یہ معاملہ تادیبی کمیٹی سے رجوع کیا گیا تو الزامات واپس لے لئے گئے اور 12 نئے الزامات عائد کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی سے ان کا اخراج المناک خاتمہ نہیں ہے بلکہ ایک حسین طویل سفر کا آغاز ہے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک کا جذبہ برقرار رہنا چاہئے۔ ہم ایک نیا نمونہ تیار کرنے کی کوشش کریں گے اور ہمخیال افراد سے ربط پیدا کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خلاف شکایت کرنے والے پنکج گپتا اور اشیش کھیتان نے تادیبی کمیٹی میں ججس کے فرائض انجام دیئے حالانکہ شکایت کنندہ جج نہیں ہوسکتا۔

دریں اثناء پرشانت بھوشن اور شانتی بھوشن پر تنقید کرتے ہوئے عاپ کے قائد آشیش کھیتن نے کہا کہ وہ ان دونوں کو نہیں چھوڑیں گے کیونکہ انہوں نے ان پر (کھیتان پر) بے بنیاد الزامات عائد کئے ہیں۔ پرشانت بھوشن نے الزام عائد کیا تھا کہ کھیتن نے رقم حاصل کرکے ایک کہانی شائع کی تھی جس سے ایک خانگی کمپنی کو فائدہ پہنچا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اب وقت آ گیا ہیکہ وہ عام آدمی پر بھی تنقیدیں کریں۔ انہوں نے مجھ پر تنقید کی ہے، میں انہیں نہیں چھوڑوں گا۔ میں اس شہر میں 15 سال قبل آیا تھا۔ میرے پاس صرف 6500 روپئے تھے۔ میں نے جو کچھ حاصل کیا ہے میری سخت محنت کا نتیجہ ہے۔ میرے پاس نہ کوئی جائیداد ہے اور نہ میرے پاس بینک بیالنس ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر وہ اس بات کا ثبوت دے دیں کہ میں نے کسی کی تائید میں خبر شائع کرنے کا معاوضہ حاصل کیا تھا تو میں سیاست چھوڑ دوں گا۔ اگر وہ ثابت نہ کرسکے تو انہیں سیاست چھوڑ دینی چاہئے۔ کھیتن کے چیلنج کے جواب میں شانتی بھوشن نے انہیں بے نقاب کرنے کی دھمکی دی۔

TOPPOPULARRECENT