Monday , November 19 2018
Home / سیاسیات / مجسموں کے بجائے غریبی، تعلیم و صحت پر توجہ ضروری

مجسموں کے بجائے غریبی، تعلیم و صحت پر توجہ ضروری

ریاستوں کے درمیان مسابقتی رجحان پر سنجے سنگھ کا اظہار حیرت
بھوپال 3 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) سردار ولبھ بھائی پٹیل کے دنیا بھر میں بلند ترین سمجھے جانے واے مجسمہ کی نقاب کشائی کے چند دن بعد عام آدمی پارٹی (عاپ) نے آج کہاکہ اس قسم کے مجسمے نصب کرنے کے بجائے حکومت کو انسداد غربت، تعلیم و طبی نگہداشت میں بہتری جیسے کلیدی مسائل پر توجہ مرکوز کرنا چاہئے۔ عام آدمی پارٹی کے قومی ترجمان اور راجیہ سبھا کے رکن سنجے سنگھ نے اس بات پر بھی حیرت کا اظہار کیاکہ دیوتاؤں اور لیڈروں کے بڑے مجسمے نصب کرنے کے معاملے میں مختلف ریاستوں کے درمیان مسابقتی دوڑ کیوں ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ ’وزیراعظم نریندر مودی کی طرف سے سردار ولبھ بھائی پٹیل کے 182 میٹر بلند مجسمہ کی تنصیب کے بعد اترپردیش کے چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے ایودھیا میں لارڈ رام کے 151 میٹر بلند مجسمہ کی تعمیر کی تجویز پیش کی ہے۔ اس مسئلہ پر سارے ملک میں اچانک ایک عجیب مقابلہ شروع ہوگیا ہے‘‘۔ انھوں نے کہاکہ ’بلند مجسموں کی تنصیب کے بجائے سخت محنت سے کمائی ہوئی ٹیکس دہندوں کی رقومات، ملک میں غریبی کے خاتمہ اور تعلیم و طبی نگہداشت میں بہتری کے لئے استعمال کی جائیں‘۔ اُنھوں نے ممبئی کے قریب بحر عرب میں چھترپتی شیواجی کے 210 میٹر بلند مجسمہ کی تعمیر کی تجویز کا حوالہ بھی دیا۔

TOPPOPULARRECENT