Thursday , December 13 2018

مجلس بچاؤ تحریک کی مقبولیت سے نام نہاد قائدین بوکھلاہٹ کا شکار

بی جے پی کھلی اور کانگریس چھپی ہوئی فرقہ پرست جماعت ‘ تلنگانہ اسمبلی میں بے باک قیادت کا ہونا ضروری‘ قائم خان اور فرحت خان کی تقاریر

بی جے پی کھلی اور کانگریس چھپی ہوئی فرقہ پرست جماعت ‘ تلنگانہ اسمبلی میں بے باک قیادت کا ہونا ضروری‘ قائم خان اور فرحت خان کی تقاریر

حیدرآباد۔ 20 اپریل (سیاست نیوز) آر ایس ایس اور بھارتیہ جنتا پارٹی سے مسلمانوں کو خوف زدہ کرنے والی قیادت اس وقت کہاں تھی جب اسیمانند نے ملک بھر میں ہوئے بم دھماکوں کے تعلق سے انکشافات کئے۔ جناب مجید اللہ خاں فرحت امیدوار حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ مجلس بچاؤ تحریک نے آج عظیم الشان انتخابی جلسہ عام سے خطاب کے دوران مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ مرکزی حکومت آج بھی اپنے سیکولرازم کا ثبوت آر ایس ایس کے سربراہ کو گرفتار کرتے ہوئے دے سکتی ہے۔ اسیمانند کے انکشافات آر ایس ایس سربراہ اور بھارتیہ جنتا پارٹی قائدین کی گرفتاری کے لئے کافی شواہد ہیں لیکن اس کے باوجود انہیں گرفتار نہیں کیا جاتا جس سے یہ اندازہ ہوتا ہے کہ جس طرح بی جے پی کھلی فرقہ پرست جماعت ہے اسی طرح کانگریس منصوبہ بند انداز میں چھپی ہوئی فرقہ پرست سیاسی جماعت ہے۔ انہوں نے آر ایس ایس سربراہ کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں ہوئے بم دھماکے خواہ وہ مکہ مسجد کا بم دھماکہ ہوا یا پھر مالیگاؤں میں ہونے والے دھماکے ہوں یا پربھنی و جئے پور میں ہونے والے دھماکے ہوں یا سمجھوتہ ایکسپریس میں ہوا بم دھماکہ ہو، ان تمام بم دھماکوں میں آر ایس ایس کے ملوث ہونے کے واضح شواہد منظر عام پر آچکے ہیں۔

جناب فرحت خاں نے بتایا کہ آر ایس ایس اور بی جے پی قائدین کی گرفتاری سے ہی ملک سے فرقہ پرستی کا خاتمہ یقینی ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجوزہ عام انتخابات کو فرقہ پرستوں اور سیکولر قوتوں کا مقابلہ قرار دینے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ یہ چھپی ہوئی اور کھلی فرقہ پرست طاقتوں اور حق کے علمبرداروں کے درمیان مقابلہ آرائی ہے۔ انہوں نے ریاست تلنگانہ میں بی جے پی کے خاتمہ کو یقینی بنانے کیلئے مجلس بچاؤ تحریک کے امیدواروں کو کامیاب بنانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ مجلس بچاؤ تحریک فرقہ پرست قوتوں کا کھل کر مقابلہ کرے گی اور فرقہ پرستی کے خاتمہ میں کوئی مفاہمت نہیں ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ وہ ملت کی فلاح و بہبود کیلئے خود کو اور اپنی جائیدادوں کے علاوہ اپنی اولاد کو وقف کردینے کا اعلان کرچکے ہیں۔ اگر مخالفین میں ذرہ برابر ملت سے ہمدردی ہے تو وہ بھی آگے آئیں اور یہ اعلان کریں۔ انہوں نے بتایا کہ بانی مجلس اتحادالمسلمین قائد ملت بہادر یار جنگ علیہ الرحمہ نے جماعت کو مستحکم کرنے کے لئے اپنی جائیدادوں کو وقف کیا اور اپنے مکان کو وقف کرتے ہوئے اس کا نام ’’بیت الامت‘‘ رکھا۔ اسی طرح تاریخ اس بات کی شاہد ہے کہ قائد ِ ملت نے اپنی اہلیہ کے زیور فروخت کرتے ہوئے مخیر حضرات کے تعاون سے دارالسلام کی عظیم الشان عمارت خریدی۔ قائد ملت سے تحریک حاصل کرنے والے صدیق دکن جناب قاسم رضویؒ نے اپنے قائد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے لاتور (مہاراشٹرا) میں اپنی تمام جائیداد وقف کردی اور آج ملت پر ایک مرتبہ پھر افتاد آپڑی ہے، ایسی صورت میں موجودہ قیادت کو بھی ان قائدین کے نقش قدم پر چلنا ہوگا۔ جناب مجید اللہ خاں فرحت نے بتایا کہ مجلس اتحادالمسلمین ان کی متاع عزیز ہے اور اس کے نظریہ کی برقراری کیلئے جدوجہد وہ کررہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مجلس اتحادالمسلمین کا نظریہ کسی معمولی انسان کا نظریہ نہیں بلکہ قائد ملت، حضرت ابوالحسنات عبداللہ شاہ صاحب نقشبندیؒ، حضرت بحرالعلوم عبدالقدیر صدیقی حسرتؒ، حضرت نوراللہ حسینی افتخاریؒ جیسی عظیم شخصیات کا نظریہ ہے۔ اس جماعت کا قیام ملت کی فلاح و بہبود کیلئے عمل میں لایا گیا تھا اور وہ کامیابی کے بعد اس نظریہ کو فروغ دیتے ہوئے ملت کی فلاح کے کام انجام دیں گے اور تعلیمی میدان میں ترقی کو یقینی بنائیں گے۔ صدر مجلس بچاؤ تحریک و امیدوار حلقہ اسمبلی چندرائن گٹہ ڈاکٹر قائم خاں نے آج اپنے انتخابی جلسہ سے خطاب کے دوران عوام کو دعوتِ فکر دیتے ہوئے کہا کہ جس وقت مجلس اتحادالمسلمین سے غازیٔ ملت مرحوم نے علیحدگی اختیار کرتے ہوئے ملت کی پسماندگی کو دُور کرنے کا بیڑہ اٹھایا تھا ، اس وقت سے ہی کروڑہا روپئے خرچ کرتے ہوئے ملت کو بے باک قیادت سے محروم کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔ ڈاکٹر قائم خاں نے بتایا کہ نوتشکیل شدہ ریاست تلنگانہ میں فرقہ پرستی کو عروج دینے کی جو کوششیں کی جارہی ہیں، ان کے خاتمہ کیلئے یہ ضروری ہے کہ ملت اسلامیہ کی بے باک قیادت ایوان اسمبلی میں موجود رہے۔

انہوں نے کہا کہ مجلس بچاؤ تحریک کی جانب سے ایوان اسمبلی میں حالات کو تبدیل کرنے کے لئے جو کوششیں کی جارہی ہیں انہیں ناکام بنانے ایک مرتبہ پھر سازشوں کے دور کا آغاز ہوچکا ہے۔ صدر مجلس بچاؤ تحریک نے بتایا کہ ریاست کی ترقی ملت کے تعلیم یافتہ نوجوانوں کے ذریعہ ہی ممکن ہے لیکن موجودہ قیادت ملت کے نوجوانوں کو تعلیمی بحران کا شکار بنائے رکھتے ہوئے اپنے مفادات کی تکمیل کررہی ہے۔ انہوں نے کانگریس، بی جے پی، تلگو دیشم اور ٹی آر ایس کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ جماعتیں مسلمانوں کی ہمدرد کبھی ثابت نہیں ہوسکتی چونکہ ان جماعتوں کو صرف اقتدار عزیز ہے جبکہ مجلس بچاؤ تحریک اقتدار کو ٹھوکر میں رکھتے ہوئے عوام کی خدمت پر یقین رکھتے ہیں۔ ڈاکٹر قائم خاں نے تحریک کے تمام امیدواروں کو کامیاب بنانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ 30 اپریل کو ٹی وی کے نشان کا بٹن دباتے ہوئے ملت اسلامیہ کی بے خوف و خطر نمائندگی کرنے والی جماعت کے امیدواروں کو منتخب بنانے کے لئے جدوجہد کریں۔ انہوں نے بتایا کہ آج دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں مقامی جماعت کی جانب سے کی گئی خفیہ مفاہمتوں کے تذکرے عام ہیں ، ایسی صورت میں حیدرآباد کے بیشتر حلقوں مجلس بچاؤ تحریک کی واضح لہر نظر آرہی ہے جس سے نام نہاد قائدین بوکھلاہٹ کا شکار ، جھوٹے اور بے بنیاد الزامات کے ذریعہ عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ گمراہی کا شکار ہوئے بغیر مجلس بچاؤ تحریک کے امیدواروں کو کامیاب بنائیں۔ جناب امجد اللہ خاں خالد کارپوریٹر اعظم پورہ ڈیویژن ، تحریک کے قائدین الحاج سید سلیم، جناب سید احمد کے علاوہ دیگر قائدین نے بھی ان انتخابی جلسوں سے خطاب کیا۔

TOPPOPULARRECENT