Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / مجلس بچاؤ تحریک کے وفد کی گورنر سے ملاقات

مجلس بچاؤ تحریک کے وفد کی گورنر سے ملاقات

بابری مسجد کی دوبارہ تعمیر پر یادداشت کی پیشکشی

بابری مسجد کی دوبارہ تعمیر پر یادداشت کی پیشکشی
حیدرآباد ۔ 7 ڈسمبر (پریس نوٹ) مجلس بچاؤ تحریک کا ایک وفد جس کی قیادت صدر مجلس بچاؤ تحریک ڈاکٹر قائم خان کررہے تھے، آج گورنر مسٹر ای ایس ایل نرسمہن سے راج بھون میں ملاقات کرتے ہوئے صدرجمہوریہ کے نام ایک یادداشت حوالے کی، جس میں مطالبہ کیا گیا کہ ساڑھے چار سو سالہ بابری مسجد کو 1992ء میں شہید کیا گیا اور آج تک شہادت میں ملوث افراد کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی اور بابری مسجد کو دوبارہ اسی مقام پر تعمیر کیا جائے۔ فرقہ پرست سنگھ پریوار کو جو بابری مسجد کی شہادت میں ملوث ہیں انہیں کیفرکردار تک پہنچایا جائے۔ یادداشت میں مطالبہ کیا گیا کہ فرقہ پرستی کی سیاست کرنے والے سیاسی قائدین کو بھی ان کے انجام تک پہنچایا جائے اور مذہبی منافرت پھیلانے والے سیاسی قائدین پابندی عائد کی جائے۔ گورنر مسٹر ای ایس ایل نرسمہن نے یادداشت کا بغور مطالعہ کیا اور وفد کو تیقن دیا کہ وہ صدرجمہوریہ ہند مسٹر پرنب مکرجی تک مطالبہ کو پہنچا دیا جائے گا۔ بعدازاں ڈاکٹر قائم خان، جناب امجداللہ خان خالد، مولانا سید طارق قادری ایڈوکیٹ نے بتایا کہ آج سارے ہندوستان میں فرقہ پرستی کی سیاست چل رہی ہے اور ہندوستانیوں مذہبی خانوں میں بانٹا جارہا ہے۔ اس سے ملک کی سالمیت اور معیشت کو خطرہ لاحق ہے۔ بی جے پی اور اس کی حلیف جماعتیں ہندو اور مسلمان میں پھوٹ ڈال کر اپنا ووٹ بینک کی فکر کررہے ہیں۔ آزادی سے لیکر آج تک مسلمان ظلم کا شکار ہوئے ہیں۔ وفد میں ڈاکٹر قائم خان کے علاوہ مولانا سید طارق قادری (جنرل سکریٹری صوفی اکیڈیمی)، عبدالقادر قادری (سکریٹری ہاس انڈیا)، جناب امجداللہ خان خالد (سابق کارپوریٹر)، جناب صالح باحمید، جناب ماجد خان، جناب راشد ہاشمی، جناب الطاف نصیب خان، جناب مظفر علی عدیم، جناب محمد شکیل شامل تھے۔

TOPPOPULARRECENT