Sunday , December 17 2017
Home / کھیل کی خبریں / ’ مجھ میں مقصد حاصل کرنے کی صلاحیت موجود ہے‘

’ مجھ میں مقصد حاصل کرنے کی صلاحیت موجود ہے‘

مارٹینا جیسی تکنیک اور معیار مجھ میں نہیں ہے : لینڈر پیس
نیویارک۔12ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام )  ہندوستان کے کہنہ مشق ٹینس اسٹار لینڈر پیس نے یو ایس اوپن مکسڈ ڈبلز میں اپنی شاندار کامیابی پر غیر معمولی طور پر جذبات سے مغلوب ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے انتہائی سادگی و انکسار کے ساتھ اپنی سوئیس جوڑی دار مارٹینا ہنگس کے کھیل کی بھرپور ستائش کی ۔ انہوں نے کہا کہ ان کے پاس ہنگس جیسی تکنیک اور معیار نہیں تھا بلکہ انہوں نے صرف اپنے کھیل کا مظاہرہ برقرار رکھنے کی کوشش کی تھی ۔ پیس نے سوئیس ساجھیدار کے ساتھ امریکی جوڑی سیام کوری اور بیتھاٹن مائیک سینڈس کو 6-4, 3-6, 10-7 سے اوپن فائنل میں شکست دی ۔ یو ایس اوپن ٹائیٹل میں اپنی تاریخی کامیابی کے بعد پیس نے کہا کہ انہوں نے تکنیک سے کہیں زیادہ ہار نہ ماننے کے جذبہ کے ساتھ کھیل جاری رکھا جس نے کامیابی سے ہمکنار کیا ۔ مارٹینا کے بارے میں کہا جاسکتا ہے کہ اس کھیل میں ضرور کوئی بات دلچسپ تھی ۔ وہ یہ کہ آپ میںکسی چیز کو پانے کیلئے صلاحیت اور ہنر ہونا چاہیئے اور میں شخصی طور پر سمجھتا ہوں کہ مارٹینا میں ایسی تکنیک اور صلاحیت موجود تھی ‘‘ ۔ لینڈر پیس نے کہا کہ ’’ ایک بات ہے کہ میرے پاس کسی چیز  کا ہنر ہے اور مجھے اس کیلئے آگے بڑھنا چاہیئے ۔ بہتر کھیل کی برقراری کیلئے یہی ایک طریقہ میری ساری زندگی کا حصہ رہا ہے کہ  بہرحال کامیابی کا راستہ تلاش کیا جائے ‘‘ ۔ پیس نے کہا کہ کسی بھی ساجھیداری کیلئے ’’ کیمیاء‘‘  ضروری ہوتی ہے اور اس ضمن میں ہنگس سے میر بہت اچھی رفاقت ہے ۔ پیس نے مزید کہا کہ ’’ بسا اوقات حالات آپ کے خلاف جاتے ہیں ۔ بسا اوقات وہ آپ کو بیوقوف بناتے ہیں ۔ اس ٹیم ورک کے بارے میں جس بات کو میں پسند کرتا ہوں وہ یہ ہے کہ کسی بھی جوڑی میں ایک ایسا ساجھیدار ہونا چاہیئے جو اپنی ٹیم کو توانائی دے سکے اور ایک ایسا ساتھی ہونا چاہیئے جو سارا دباؤ اپنے کندھوں پر لیتے ہوئے ٹیم کو کامیابی کی سمت بڑھائے ‘‘ ۔ پیس نے کہا کہ ’’ اگر میں مارٹینا کو خوش رکھ سکتا ہوں تو میں انہیں پُرسکون اور مطمئن بھی رکھ سکتا ہوں ۔ جہاں تک ٹینس ہے اس میں مجھے ڈرنے گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں رہتی ۔ یہ نوجوان لڑکی ٹینس کورٹ اور اسکے باہر بھی چست و چوکس رہی ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT