Saturday , November 25 2017
Home / ہندوستان / محبوبہ مفتی احتجاج کے دوران گرفتار افراد کو رہا کریں: عمر عبداللہ

محبوبہ مفتی احتجاج کے دوران گرفتار افراد کو رہا کریں: عمر عبداللہ

سری نگر۔28نومبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر جموں و کشمیر محبوبہ مفتی کو ان ہزاروں افراد کو پہلے رہا کرنا چاہئے نہیں وادی کشمیر میں جاریہ سال موسم گرما کی بے چینی کے دوران گرفتار کیا گیا تھا اس کے لئے مرکز سے منظوری حاصل کرنا ضروری نہیں ہے۔ اپوزیشن نیشنل کانفرنس کے قائد عمر عبداللہ نے اپنے ٹوئٹر پر آج تحریر کیا کہ ہزاروں گرفتار شدگان کو رہا کرنے کے بارے میں آپ کا کیا کہنا ہے جنہیں گرفتار کیا گیا تھا ان سب کے خلاف مقدمات واپس لینا چاہئے۔ اس کے لئے دہلی سے کارروائی کی ضرورت نہیں ہے۔ عمر عبداللہ سابق میں ریاست کے چیف منسٹر رہ چکے ہیں۔ ان کا تبصرہ محبوبہ مفتی کی وزیراعظم نریندر مودی سے دہلی میں آج قبل ازیں ملاقات کے بعد منظر عام پر آیا۔ اس ملاقات میں محبوبہ مفتی نے بحالی اعتماد اقدامات کی وزیراعظم سے خواہش کی تھی تاکہ ریاستی عوام تک رسائی حاصل کی جاسکے۔ نیشنل کانفرنس کے کارگزار صدر نے کہا کہ محبوبہ مفتی کو مرکز کی طرف دیکھنا پڑتا ہے کیوں کہ انہوں نے چیف منسٹر کے دفتر کے تمام اختیارات مرکز کے حوالے کردیئے ہیں۔ محبوبہ مفتی کو ہر چیز کے لئے مرکز کی منظوری حاصل کرنی پڑتی ہے کیوں کہ انہوں نے مرکز کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے ہیں۔ جموں و کشمیر میں پہلی بار محبوبہ مفتی کے والد مفتی محمد سعید نے بی جے پی کے ساتھ اتحاد کے ذریعہ پی ڈی پی ۔ بی جے پی مخلوط حکومت قائم کی تھی ۔ محبوبہ مفتی کافی مدت تک اس مخلوط حکومت کے احیاء کے سلسلہ میں پس و پیش میں مبتلا رہی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT