Sunday , February 18 2018
Home / ہندوستان / محروسین سے برآمد لیپ ٹاپ اور موبائل فون کی فارنسک جانچ

محروسین سے برآمد لیپ ٹاپ اور موبائل فون کی فارنسک جانچ

کولکاتا27نومبر(سیاست ڈاٹ کام )کلکتہ پولس کی اسپیشل ٹاسک فورسیس نے القاعدہ سے تعلق رکھنے کے الزام میں گرفتار ملزمین کے پاس سے برآمد لیپ ٹاپ، موبائل فون کو فارنسک جانچ کیلئے بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ایس ٹی ایف کے ذرائع کے مطابق پولس کو امید ہے کہ فارنسک جانچ سے کئی اہم معلومات برآمد ہونے کی امید ہے ۔میل اور دیگر بات چیت کی جانچ کرکے معلوم کیا جائے گا ان مبینہ دہشت گردو ں کی پہنچ کہا ں تک ہے ۔خیال رہے کہ 21نومبر سے اب تک ایس ٹی ایف نے بنگلہ دیش کی ممنوعہ جماعت انصار اللہ بنگلہ ٹیم کے تین ممبران کو گرفتار کرچکی ہے ۔ان میں سے ایک کے پاس تو جعلی آدھار کارڈ بھی موجود تھا۔ایس ٹی ایف کے ذرائع کے مطابق انصار اللہ بنگلہ ٹیم کے یہ تینو ں ممبران ہندوستان میں نوجوانوں بالخصوص خواتین کو بھرتی کرنے کی کوشش کررہے تھے ۔ان کی توجہ دیہی علاقوں پر زیادہ تھی ۔وہ فلاحی کاموں کے ذریعہ عوام تک پہنچنے کی کوشش کررہے تھے ۔ایس ٹی ایف کے ذرائع نے بتایا کہ ان تینوں ممبران نے اس کا اقرا ر کیا ہے کہ خاتون ارکان نہیں ہونے کی وجہ سے انہیں آپریشن چلانے میں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔گرفتار تین افراد میں سے ایک شمشاد نامی ملزم نے اقرار کیا ہے کہ اسے کولکاتا میں ہتھیار جمع کرنے کی ہدایت دی گئی تھی اور روپے کیلئے نیشنلسٹ بینکوں میں ڈکیتی کرنے کی بھی ہدایت تھی ۔اصل مقصد ان کا ہتھیار جمع کرنا تھا اور اسی مقصد کے تحت یہ لوگ کلکتہ ریلوے اسٹیشن گئے تھے جہاں ایس ٹی ایف کے اہلکاروں نے ان لوگوں کو دپوچ لیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT