Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / محمد اسد اللہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ مقرر

محمد اسد اللہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ مقرر

سیاست نیوز پر حکومت کی حرکت

سیاست نیوز پر حکومت کی حرکت
حیدرآباد ۔22 ۔ اپریل (سیاست نیوز) ریاستی وقف بورڈ کو تقریباً 6 ماہ بعد آخرکار مستقل چیف اگزیکیٹیو آفیسر مل چکا ہے۔ روزنامہ سیاست کی جانب سے مسلسل اس جانب توجہ دہانی اور چیف اگزیکیٹیو آفیسر کے تقرر کے احکامات کی اجرائی کے باوجود عمل آوری نہ ہونے سے متعلق خبر کی اشاعت کے بعد حکومت حرکت میں آگئی۔ تلنگانہ حکومت کی نمائندگی پر چیف کمشنر لینڈ اڈمنسٹریشن نے اسسٹنٹ سکریٹری محمد اسد اللہ کو ریلیو کردیا اور آج حکومت نے انہیں چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ کے تقرر کے احکامات جاری کردیئے ۔ 4 اکتوبر 2014 ء سے وقف بورڈ میں مستقل چیف اگزیکیٹیو آفیسر نہیں تھا اور وقف بورڈ کے ڈپٹی سکریٹری سلطان محی الدین سی ای او کی زائد ذمہ داری سنبھال رہے تھے۔ حکومت نے 30 جنوری 2015 ء کو احکامات جاری کرتے ہوئے محمد اسداللہ ڈپٹی کلکٹر و اسسٹنٹ سکریٹری سی سی ایل اے کی خدمات محکمہ اقلیتی بہبود کے حوالہ کی تھیں تاکہ انہیں چیف اگزیکیٹیو آفیسر مقرر کیا جائے لیکن سی سی ایل اے دفتر سے انہیں ریلیو نہیں کیا جارہا تھا۔ پرنسپل کمشنر دفتر سی سی ایل اے نے 18 اپریل کو محمد اسداللہ کو ریلیو کیا اور اسی دن انہوں نے محکمہ اقلیتی بہبود میں جوائننگ رپورٹ پیش کی۔ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے آج جی او آر ٹی 60 جاری کرتے ہوئے محمد اسداللہ ڈپٹی کلکٹر کو چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ مقرر کیا ہے۔ سلطان محی الدین ڈپٹی سکریٹری وقف بورڈ اس عہدہ کی زائد ذمہ داری سے سبکدوش ہوجائیں گے۔ واضح رہے کہ وقف بورڈ میں 24 مارچ سے اسپیشل آفیسر کا عہدہ بھی خالی ہے کیونکہ ہائیکورٹ نے اسپیشل آفیسر کے تقرر کو کالعدم قرار دیا ہے۔ حکومت اس فیصلہ کے خلاف اپیل دائر کر رہی ہے۔ توقع ہے کہ چیف اگزیکیٹیو آفیسر کے تقرر سے وقف بورڈ کی کارکردگی بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ محکمہ ریونیو سے تعلق رکھنے والے عہدیدار کے تقرر سے اوقافی جائیدادوں کے تحفظ اور ریونیو ریکارڈ میں وقف درج کرانے میں مدد ملے گی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT