Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / محمد بن صالح واھلان کی ضمانت پر رہائی کا حکم

محمد بن صالح واھلان کی ضمانت پر رہائی کا حکم

چندرائن گٹہ حملہ کیس میں تحت کی عدالت کے فیصلے کے خلاف اپیل کی سماعت
حیدرآباد /18 اگست ( سیاست نیوز ) حیدرآباد ہائی کورٹ نے آج چندرائن گٹہ حملہ کیس کے سزاء یافتہ ملزم محمد بن صالح واھلان کی سزا کو معطل کرتے ہوئے ان کی ضمانت پر رہائی کا احکام جاری کیا ۔ جسٹس ٹی سنیل چودھری نے اپنے فیصلے میں یہ احکام جاری کئے ہیں کہ محمد واھلان کو 50ہزار کے شخصی بانڈز اور دو مچلکے جمع کئے جانے پر ضمانت پر رہا کیا جائے ۔ قبل ازیں وکیل دفاع ایڈوکیٹ بی جی راجیشور نے اپیل کی سماعت کے دوران ہائی کورٹ میں اپنے دلائل پیش کرتے ہوئے بتایا کہ ان کے موکل محمد واھلان کو نچلی عدالت کی جانب سے دی گئی 10 سال کی سزا غلط ہے اور سیشنس کورٹ نے مکمل کیس کے سماعت کے دوران وہ ضمانت پر تھے ۔ انہوں نے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ چندرائن گٹہ حملہ کے ویڈیو میں ان کے موکل موجود نہیں ہیں اور ان کی اپیل کی مکمل سماعت تک انہیں ضمانت دی جائے ۔ واضح رہے کہ 29 جون 7 ویں ایڈیشنل میٹروپولیٹن سیشن جج ڈاکٹر ٹی سرینواس راؤ نے حملہ کیس میں چار ملزمین حسن بن عمر یافعی ، عبداللہ یافعی ، عود یافعی اور محمد واھلان کو قصوروار پائے جانے پر 10 سال کی قید بامشقت کی سزا سنائی تھی جبکہ 10 ملزمین بشمول محمد بن عمر یافعی المعروف محمد پہلوان کو باعزت بری کردیا تھا ۔ سزا یافتہ چار ملزمین نے ہائی کورٹ میں اپیل داخل کرتے ہوئے سیشنس کورٹ کے فیصلے کو کالعدم کرنے اور انہیں فی الفور ضمانت پر رہا کرنے کی گذارش کی تھی جس پر عدالت نے آج اپیل کی سماعت مقرر کی تھی ۔ جسٹس ٹی سنیل چودھری نے محمد واھلان کی سزا کو معطل کرتے ہوئے ضمانت پر رہائی کا حکم دیا جبکہ دیگر تین ملزمین کی سماعت کو زیر التواء رکھا ہے ۔

 

TOPPOPULARRECENT