Friday , September 21 2018
Home / عرب دنیا / محمود عباس مشرق وسطیٰ امن مذاکرات کا نیا خاکہ تجویز کریں گے

محمود عباس مشرق وسطیٰ امن مذاکرات کا نیا خاکہ تجویز کریں گے

نیویارک ، 23 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام)سیول حقوق کے لئے امریکی جدوجہد کے ساتھ مماثلت اختیار کرتے ہوئے فلسطینی صدر محمود عباس نے عزم کیا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ امن بات چیت کیلئے نیا ٹائم ٹیبل پیش کریں گے جب اُنھیں اس ہفتہ عالمی قائدین سے خطاب کا موقع ملے گا ۔ ’’میں آج وزیراعظم (بنیامین )نتین یاہو سے کہتا ہوں کہ قبضہ ختم کردیں اور امن قائم کر

نیویارک ، 23 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام)سیول حقوق کے لئے امریکی جدوجہد کے ساتھ مماثلت اختیار کرتے ہوئے فلسطینی صدر محمود عباس نے عزم کیا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ امن بات چیت کیلئے نیا ٹائم ٹیبل پیش کریں گے جب اُنھیں اس ہفتہ عالمی قائدین سے خطاب کا موقع ملے گا ۔ ’’میں آج وزیراعظم (بنیامین )نتین یاہو سے کہتا ہوں کہ قبضہ ختم کردیں اور امن قائم کریں ‘‘ عباس نے نیویارک میں کل ایک موقع پر یہ بات کہی ۔ وہ کوپر یونین ہال میں اسٹوڈنٹس سے خطاب کررہے تھے جہاں کبھی سابق امریکی صدر ابراہم لنکن نے غلامی کا خاتمہ کردینے کی اپیل کی تھی ۔ عباس نے دنیا پر زور دیا کہ مسئلہ فلسطین پر نظرثانی کریں۔ انھوں نے کہاکہ بین الاقوامی برادری کی ذمہ داری ہے کہ ہمارے عوام کا تحفظ کریں، جو دہشت کے سائے میں جی رہی ہے اور جسے قابض فوج کا مسلسل خطرہ درپیش ہے ۔

عباس کو اُن کے خطاب کے دوران ایک سے زائد موقع پر حاضرین کی جانب سے تالیوں کی گونج کی شکل میں حمایت حاصل ہوئی ، جہاں مختلف مذاہب بشمول صیہونی طلبہ موجود تھے ۔ عباس نے اپنی تقریر میں جو عام امریکی سامعین سے اُن کا پہلا انگریزی خطاب قرار دیا جارہا ہے ، کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ بین الاقوامی برادری نوآبادیات سے ہمیں محفوظ رکھے اور اسرائیلی آرمی کے ظلم سے بچائے۔ ’’ہم یہ سمجھنے سے قاصر ہیں کہ کس طرح اسرائیلی حکومت اس قدر گمراہ ہوسکتی ہے کہ اُسے غزہ پر بلااشتعال مسلسل بمباری میں کوئی قباحت معلوم نہ ہو جبکہ ہزاروں خواتین اور بچے محض نفرت کی کارروائی کا شکار ہوگئے ‘‘۔ انھوں نے اپنے عزائم آشکار کرتے ہوئے کہا کہ اس ہفتہ میں اقوام متحدہ کو امن مذاکرات کیلئے نئے خاکہ کی تجویز پیش کروں گا ۔ اُن کے انگریزی خطاب کے دوران امریکہ کے اس قدیم تعلیمی ادارے میں حاضرین نے کھڑے ہوکر اُن سے یگانگت کا اظہار کیا۔

TOPPOPULARRECENT