Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / محکمہ آثار قدیمہ مکہ مسجد کی عظمت رفتہ برقرار رکھنے کوشاں

محکمہ آثار قدیمہ مکہ مسجد کی عظمت رفتہ برقرار رکھنے کوشاں

دکن وقف پروٹیکشن سوسائٹی وفد کی ڈائرکٹر آثارقدیمہ شریمتی این آر ویسا لاچی سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 19 اگست (سیاست نیوز) دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی کے زیر اہتمام ایک کل جماعتی وفد نے آج ڈائرکٹر آثار قدیمہ شریمتی این آر ویسالا چی (ائی او پی ایس)سے ملاقات کرتے ہوئے مکہ مسجد کی خستہ حالی کے متعلق یادوشت پیش کی۔ سینئر کمیونسٹ قائد وسابق رکن پارلیمنٹ راجیہ سبھا جناب سید عزیز پاشاہ کی قیادت میں صدر جماعت اسلامی ہند تلنگانہ واڈیشہ مولانا حامد محمد خان ‘ صد ر دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی عثمان بن محمد الہاجری‘ جنرل سکریٹری صوفی اکیڈیمی مولانا سید طارق قادری‘ صدر کانگریس اقلیتی سل گریٹر حیدرآباد عبداللہ سہیل‘ صدر تلگودیشم تلنگانہ اقلیتی سل محمد تاج الدین ‘ سابق کارپوریٹر چارمینار محمد غوث‘ تلگودیشم قائد زبیر العمودی‘چیف کنونیر ایس سی ‘ ایس ٹی بی سی مسلم فرنٹ ثناء اللہ خان ‘ سابق ڈی ایس پی جناب عظمت اللہ خان ‘ ایڈوکیٹ سید کریم الدین شکیل‘ جناب عبدالستا ر تنظیم آواز ‘ شیخ ندیم اے ائی وائی ایف‘ مقبول الہاجری‘ محمداحمد ‘ محمد انور حسین جنرل سکریٹری تلگو یوتا‘الیا س شمسی کے علاوہ دیگر پر مشتمل وفد نے مکہ مسجد کی حقیقی صورتحال سے واقف کرواتے ہوئے کہاکہ ایک روز قبل ہی کل جماعتی وفد نے مکہ مسجد کا دورہ کرتے ہوئے وہاں کے حالات کا جائزہ لیاتھا ۔ وفد نے بتایا کہ مسجد کے چھت پر پانی جمع ہونے کی وجہہ سے چھت کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے۔ وفد نے یہ بھی کہاکہ مسجد کے چھت سے گچی گررہی ہے جس کی وجہہ سے ایک حصہ میںمصلیوں کو نماز ادا کرنے کی اجازت نہیںہے اور اس مقام پر رکاوٹ کھڑی کردی گئی ہے۔ وفد نے مسجد کی حالت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کی کوتاہی کے سبب مستقبل میںکسی بڑے نقصان کا سامنا کرنے کا سبب بھی بن سکتا ہے۔ وفد نے ڈائرکٹر محکمہ آثارِ قدیمہ سے خواہش ظاہر کی کہ وہ ماہرین کی ٹیم کے ساتھ مسجد کا ایک مرتبہ دورہ کرتے ہوئے حقائق سے واقفیت حاصل کریں۔جس پر شریمتی این آرو یسالاچی نے یقین دلایا کہ و ہ بہت جلد مسجد کا معائنہ کریں گے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ محکمہ آثار ِ قدیمہ مسجد کی عظمت رفتہ کو قائم رکھنے کے لئے سنجیدہ ہے اور مسجد کی آہک پاشی او رتزین نو کے لئے ماہرین کی رائے حاصل کرتے ہوئے مستقبل میںایک سو سال تک مسجد کو کسی قسم کے نقصان کا سامنا نہیںکرنا پڑے اس طرح کا منصوبہ بنایاجارہا ہے ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ مسجد کی تعمیر سے لیکر اب تک موثر انداز میںکسی قسم کا کوئی تعمیری کام اب تک انجام نہیںدیاگیا ہے جس کی وجہہ سے بار ش کے موسم میںمسجد کے چھت سے پانی مسجد میں رس رہا ہے۔ شریمتی این آر ویسالا چی نے کہاکہ اس کے ساتھ مکہ مسجد کے صحن میںموجود شاہی مقبروں کی بھی مرمت کا جنگی خطوط پر کام کیاجائے گا۔ انہو ںنے بتایا کہ نائب وزیراعلی تلنگانہ ریاست الحاج محمد محمودعلی اورمتعلقہ وزیر مکہ مسجد کی مرمت او رآہک پاشی کے کاموں کی ماہرین کی خدمات سے استفادہ کرتے ہوئے جلد از جلد شروعات کی ہدایت جاری کرچکے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ہندوستان بھر کے تیس سے زائد ہرٹیج سائیڈس بشمول ہمپی کے آثار قدیمہ کی تزین نو کے امور انجام دینے والے ماہر ادارے کی خدمات سے استفادہ کرنے کاکام کیاجارہا ہے۔ بعدازاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ ڈائرکٹر آثار قدیمہ سے ہماری نمائندگی مثبت ثابت ہوئی ہے۔ انہو ںنے بتایا کہ مکہ مسجد بچائو کی کوشش ایک عوامی تحریک میںتبدیل ہوگئی ہے اور ہمیںیقین ہے کہ بہت جلد محکمہ آثار قدیمہ اور حکومت تلنگانہ ہمارے مطالبات کی یکسوئی میںمکہ مسجد کے اندر تعمیری سرگرمیوں کی شروعات عمل میںلائیں گے۔ جناب عثمان بن محمد الہاجری نے مکہ مسجد کی عظمت رفتہ کی بحالی تک اس تحریک کو جاری رکھنے کی عوام سے اپیل کی ۔

TOPPOPULARRECENT