Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / محکمہ اقلیتی بہبود کیلئے 1179 کروڑ روپئے کے بجٹ کی تجویز

محکمہ اقلیتی بہبود کیلئے 1179 کروڑ روپئے کے بجٹ کی تجویز

حیدرآباد۔/21فبروری، ( سیاست نیوز ) تلنگانہ حکومت نے آئندہ مالیاتی سال اقلیتی بہبود کے بجٹ میں اضافہ کا فیصلہ کیا ہے۔ اقلیتی بہبود بجٹ کے تعین کے سلسلہ میں وزیر فینانس ای راجندر نے آج محکمہ اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا جس میں جاریہ سال کے بجٹ کے خرچ کے علاوہ آئندہ مالیاتی سال کی بجٹ تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔

حیدرآباد۔/21فبروری، ( سیاست نیوز ) تلنگانہ حکومت نے آئندہ مالیاتی سال اقلیتی بہبود کے بجٹ میں اضافہ کا فیصلہ کیا ہے۔ اقلیتی بہبود بجٹ کے تعین کے سلسلہ میں وزیر فینانس ای راجندر نے آج محکمہ اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا جس میں جاریہ سال کے بجٹ کے خرچ کے علاوہ آئندہ مالیاتی سال کی بجٹ تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔ محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے مالیاتی سال 2015-16کیلئے 1179 کروڑ کے بجٹ کی تجاویز پیش کی جس سے وزیر فینانس ای راجندر نے اتفاق کرلیا۔ جاریہ سال اقلیتی بہبود کا بجٹ ایک لاکھ 33ہزار کروڑ تھا۔ وزیر فینانس کی جانب سے طلب کردہ اس جائزہ اجلاس میں اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل، ڈائرکٹر اقلیتی بہبود محمد جلال الدین اکبر ، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن پروفیسر ایس اے شکور و دیگر اداروں کے عہدیداروں نے شرکت کی۔ وزیرفینانس کو جاریہ سال مکمل بجٹ کے خرچ میں حائل دشواریوں کی تفصیلات سے واقف کرایا گیا۔ جس پر وزیر فینانس نے کہا کہ جاریہ سال بجٹ کی اجرائی میں تکنیکی وجوہات کے سبب تاخیر ہوئی ہے تاہم حکومت آئندہ مالیاتی سال اقلیتی بہبود کے مکمل بجٹ کے خرچ کو یقینی بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ اقلیتوں کی معاشی اور تعلیمی ترقی کے سلسلہ میں سنجیدہ ہیں کیونکہ تلنگانہ میں اقلیتیں ان دونوں شعبوں میں دیگر طبقات سے کافی پسماندہ ہیں۔ وزیر فینانس نے اقلیتی بہبود کے اداروں میں زائد اسٹاف کی منظوری، اردو میڈیم مدارس میں اساتذہ کے تقررات و بنیادی سہولتوں کی فراہمی، اردو میڈیم ڈائیٹ میں اساتذہ کے تقررات، ہر ضلع میں اقلیتی طلباء و طالبات کیلئے اقامتی مدارس اور محکمہ میں عارضی طور پر خدمات انجام دینے والے ملازمین کو باقاعدہ بنانے جیسی تجاویز سے اتفاق کیا۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی و فلاحی اسکیمات کیلئے بجٹ کی کمی حائل نہیں ہوگی۔ وزیر فینانس نے عہدیداروں کو مشورہ دیا کہ وہ جاریہ اسکیمات کے علاوہ حکومت کو بعض نئی اسکیمات تجویز کریں۔انہوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ اقلیتوں کو قرض کی فراہمی سے متعلق اسکیم پر خصوصی توجہ مرکوز کریں۔ اس کے علاوہ مساجد اور قبرستانوں کی حصار بندی اور مرمت کیلئے گرانٹ جاری کریں۔ انہوں نے اقلیتی بہبود کے اداروں میں اسٹاف کی کمی کے سلسلہ میں تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی جس میں اسٹاف کی ضرورت کے علاوہ مخلوعہ جائیدادوں اور عارضی ملازمین کی بھی تفصیلات درج ہوں۔ انہوں نے کہا کہ کئی برسوں سے عارضی خدمات انجام دینے والے ملازمین کے سلسلہ میں حکومت کا ہمدردانہ موقف ہے اور وہ انہیں انصاف فراہم کرنا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قرض کی فراہمی سے متعلق اسکیمات کے سلسلہ میں حقیقی مستحقین تک سبسیڈی پہنچنے کو یقینی بنایا جائے۔ وزیر فینانس نے کہا کہ بینکوں کی جانب سے قرض کی اجرائی میں تساہل کی شکایت عام ہے تاہم وہ بینکرس سے بات کرینگے۔

TOPPOPULARRECENT