Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / محکمہ اقلیتی بہبود کی ذمہ داری سے سید عمر جلیل کو ہٹادیا گیا

محکمہ اقلیتی بہبود کی ذمہ داری سے سید عمر جلیل کو ہٹادیا گیا

پرنسپال سکریٹری بہبود پسماندہ طبقات ڈاکٹر ٹی رادھا کو زائد ذمہ داری

پرنسپال سکریٹری بہبود پسماندہ طبقات ڈاکٹر ٹی رادھا کو زائد ذمہ داری

حیدرآباد۔/3جون، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کمزور طبقات اور اقلیتوں کی بھلائی سے متعلق اُمور پر توجہ مرکوز کی ہے۔ انہوں نے ایس سی، ایس ٹی، بی سی اور اقلیتی بہبود سے متعلق تمام قلمدان اپنے پاس رکھے ہیں۔ اسی مناسبت سے چیف منسٹر نے اپنی کارکردگی کے آغاز کے پہلے ہی دن ایک سینئر آئی اے ایس عہدیدار کو ان تمام طبقات کی بھلائی کے اُمور حوالے کئے۔ موجودہ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل کو ابھی کسی ریاست کیلئے الاٹ نہیں کیا گیا لہذا تلنگانہ حکومت نے اقلیتی بہبود کا محکمہ سینئر آئی اے ایس عہدیدار ڈاکٹر ٹی رادھا پرنسپل سکریٹری بہبودی پسماندہ طبقات کے حوالے کیاہے۔ اس سلسلہ میں آج احکامات جاری کئے گئے۔ ڈاکٹر ٹی رادھا کو بی سی اور اقلیت کے علاوہ ایس سی اور ایس ٹی طبقات کی بہبود کا محکمہ بھی تفویض کیا گیا۔ تلنگانہ کیلئے تاحال صرف 44آئی اے ایس عہدیداروں کو الاٹ کیا گیا ہے اور اہم محکمہ جات ان عہدیداروں میں تقسیم کئے گئے اور کئی عہدیداروں کو زائد محکمہ جات کی ذمہ داری دی گئی۔ چیف منسٹر کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی سے متعلق تمام اُمور کو چندر شیکھر راؤ کسی ایک عہدیدار کے تحت رکھنا چاہتے ہیں تاکہ اسکیمات پر موثر عمل آوری کو یقینی بنایا جاسکے۔ اس کے علاوہ چیف منسٹر جوخود ان تمام طبقات کی بہبود کے انچارج ہیں وہ علحدہ علحدہ عہدیداروں سے جائزہ اجلاس کے بجائے صرف ایک عہدیدار سے بہبودی کے 4محکمہ جات کی رپورٹ حاصل کرسکیں۔ واضح رہے کہ جناب سید عمر جلیل نے 7ڈسمبر 2013ء کو اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود کے عہدہ کی ذمہ داری سنبھالی تھی اور وہ اس عہدہ پر تقریباً چھ ماہ برقرار رہے۔ بتایا جاتا ہے کہ عمر جلیل نے دونوں ریاستوں میں تلنگانہ کا آپشن دیا ہے اور بہت جلد حکومت انہیں نئی ذمہ داری دے گی۔ اسی دوران محکمہ اقلیتی بہبود میں کمشنریٹ اور سکریٹریٹ کے ملازمین کی دونوں ریاستوں میں تقسیم کا عمل مکمل کرلیا گیا ہے۔ سکریٹریٹ میں موجود اقلیتی ڈپارٹمنٹ کے ملازمین دونوں ریاستوں کے علحدہ دفاتر سے خدمات انجام دیں گے۔ تلنگانہ کیلئے محکمہ اقلیتی بہبودکا دفتر سکریٹریٹ کے D بلاک گراؤنڈ فلور سے بدستور خدمات انجام دے گا جبکہ آندھرا پردیش اقلیتی بہبود کا سکریٹریٹ میں دفتر Lبلاک میں قائم کیا جائے گا۔ متعلقہ ریاستوں کی فائیلوں کی منتقلی کا کام جاری ہے۔ اسی طرح اقلیتی بہبود کمشنریٹ موجودہ دفتر واقع چیاپل روڈ انشورنس بلڈنگ کے علحدہ علحدہ بلاکس میں تقسیم ہوجائے گا۔ حکومت نے اقلیتی بہبود سے متعلق دیگر اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے عہدیداروں کے تقرر پر توجہ مرکوز کی ہے۔ موجودہ اسپیشل آفیسر وقف بورڈ جناب شیخ محمد اقبال (آئی پی ایس) کو تاحال کوئی نئی ذمہ داری نہیں دی گئی اور وہ نئے احکامات تک موجودہ عہدہ پر برقرار رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT