Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / محکمہ اقلیتی بہبود کے کل ہند مشاعرہ ‘ شام غزل ومحفل قوالی کا کامیاب انعقاد

محکمہ اقلیتی بہبود کے کل ہند مشاعرہ ‘ شام غزل ومحفل قوالی کا کامیاب انعقاد

عوام کی کثیر تعداد میں شرکت ۔ وزرا اور دیگر سرکاری نمائندوں کا شرکت سے گریز
حیدرآباد۔ 2 جون (سیاست نیوز) تلنگانہ کے دوسرے یوم تاسیس کے موقع پر محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے تلنگانہ عوام کیلئے تفریحی پروگرام منعقد کئے گئے جن میں کل ہند مشاعرہ، شام غزل اورمحفل قوالی کا اہتمام کیا گیا۔ شہر کے مختلف مقامات پر ان پروگرامس سے عوام لطف اندوز ہوئے۔ قلی قطب شاہ اسٹیڈیم میں منعقدہ کل ہند مشاعرہ میں بیرونی و مقامی شعرا نے کلام پیش کئے۔ یہ مشاعرہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کی زیرسرپرستی منعقد ہوا ، صدارت جناب محمد محمود علی ڈپٹی چیف منسٹر کرنے والے تھے، مشاعرہ میں وزراء و ارکان پارلیمان و دیگر کو مہمان خصوصی و اعزازی مدعو کیا گیا تھا لیکن مقامی رکن اسمبلی کے سوا کوئی مہمان موجود نہیں تھے۔ مشاعرہ میں داد و تحسین پانے والے شعرا میں جوہر کانپوری، ماجد دیوبندی، حامد بھنساولی، لتا حیا، شبینہ ادیب، ضیا ٹونکی، رئیس قاسمی، ہاشم فیروز آبادی شامل ہیں۔ علاوہ ازیں میزبان شعراء میں ڈاکٹر محمد علی رفعت، آغا سروش، تسنیم جوہر، صوفی سلطان شطاری کے علاوہ ابراہیم خاں ایاز کوکب ذکی شامل ہیں۔ مشاعرہ میں جناب اے کے خاں ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو کے علاوہ ڈاکٹر ایس اے شکور ڈائرکٹر سیکریٹری  اُردو اکیڈیمی نے شرکت کی جبکہ نظامت کے فرائض جناب اسلم فرشوری نے انجام دیئے۔ محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے منعقدہ کُل ہند مشاعرہ کے باب الداخلوں پر عوام کے اژدھام کو روکنے باؤنسرس کو تعینات کیا گیا تھا جس سے عوام میں برہمی دیکھی گئی ۔ انڈور اسٹیڈیم فتح میدان میں شام غزل کا انعقاد عمل میں لایا گیا جہاں معروف فنکار طلعت عزیز نے اپنی آواز کا جادو جگا کر سامعین کو مسحور کردیا۔ یہاں موجود اہم شخصیات میں جناب عمر جلیل سیکریٹری اقلیتی بہبود، جناب اے کے خاں اور دیگر شامل ہیں۔

 

طلعت عزیز کے علاوہ مقامی گلوکار خان اطہر اور رکن الدین نے بھی اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔ ان تہذیبی و تفریحی پروگراموں کے دوران سامعین نے فنکاروں و شعراء کی خوب پذیرائی کی۔ اُردو مسکن خلوت مبارک میں محفل قوالی کا اہتمام کیا گیا تھا جہاں سالم برادران بندہ نوازی کے علاوہ وارثی برادران اور احسن حسین خان بندہ نوازی نے صوفی کلام پیش کرکے ماحول کو پُرکیف بنادیا۔ محکمہ اقلیتی بہبود حکومت کے ان تینوں پروگرامس میں عوام کی بڑی تعداد شریک رہی ۔ تینوں مقامات پر عوام کیلئے خصوصی انتظامات تھے۔ قلی قطب شاہ اسٹیڈیم میں کل ہند مشاعرہ کے دوران حامد بھنساولی کے اشعار کو خوب داد و تحسین حاصل ہوئی۔ انہوں نے اپنے کلام میں حالات پر طنز کیا ۔ مقامی شاعر کوکب ذکی کے اشعار و قطعات کو بھی پسند کیا گیا۔ محترمہ لتا حیا نے غزل کے ساتھ گیت اور نظم پیش کئے جبکہ محترمہ شبینہ ادیب اور جوہر کانپوری کے انقلابی اشعار کو بھی داد و تحسین حاصل ہوئی۔ ماجد دیوبندی نے اپنے منفرد انداز میں غزل و اشعار پیش کئے۔

TOPPOPULARRECENT