محکمہ دفاع کو غیر ملکی آلات پر انحصار کم کرنے کا مشورہ

نئی دہلی 12 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) مسلح افواج کو غیر ملکی آلات پر انحصار کم کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے صدرجمہوریہ ہند پرنب مکرجی نے آج کہاکہ عصری ہتھیاروں سے لیس پیچیدہ صیانتی خطرات بشمول بین الاقوامی دہشت گردی کا مقابلہ کیا جانا چاہئے۔ اُنھوں نے دفاع کے شعبہ میں راست غیر ملکی سرمایہ کاری کی اعظم ترین حد 26 سے 49 فیصد کردینے کا حوالہ دیت

نئی دہلی 12 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) مسلح افواج کو غیر ملکی آلات پر انحصار کم کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے صدرجمہوریہ ہند پرنب مکرجی نے آج کہاکہ عصری ہتھیاروں سے لیس پیچیدہ صیانتی خطرات بشمول بین الاقوامی دہشت گردی کا مقابلہ کیا جانا چاہئے۔ اُنھوں نے دفاع کے شعبہ میں راست غیر ملکی سرمایہ کاری کی اعظم ترین حد 26 سے 49 فیصد کردینے کا حوالہ دیتے ہوئے زور دیا کہ ایک اچھی طرح غور و فکر کے بعد تیار کردہ حکمت عملی کی ضرورت ہے جس کا بنیادی مرکز توجہ اندرون ملک فوجی صنعت کا قیام ہونا چاہئے۔ 54 ویں این ڈی سی کورس کے ارکان اور قومی دفاعی کالج کے عملہ سے خطاب کرتے ہوئے اُنھوں نے کہاکہ آج ملک کو کئی چیالنجوں کا سامنا ہے۔ صیانت کے پیچیدہ خطرات کا مقابلہ کرنے کے لئے ہماری مسلح افواج کو بھی عصری اور نفیس آلات سے لیس ہونا چاہئے۔ تاہم اُنھوں نے فوج کے درآمد کردہ آلات پر انحصار پر تشویش ظاہر کی اور کہاکہ یہ انتہائی بدبختانہ بات ہے کہ ہماری فوجیں درآمد کردہ آلات پر بہت زیادہ انحصار کرتی ہیں۔ یہ انحصار سرمایہ کی ضرورت کا 70 فیصد ہے لیکن اِس اعلیٰ سطحی انحصار میں ہماری مسلح افواج کے لئے کئی خطرے پوشیدہ ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ اہم فاضل پرزوں اور اہم لمحات میں تائید ہماری فوج کے لئے سنگین چیالنجس پیش کرسکتی ہے۔ اِس سطح کا انحصار ٹھوس انداز میں کم کیا جانا چاہئے۔ صدرجمہوریہ مسلح افواج کے اعلیٰ ترین کمانڈر بھی ہیں۔ اُنھوں نے اپیل کی کہ مملکت کے مختلف شعبوں میں ہم آہنگی ضروری ہے۔ سیاسی قائدین، سینئر سیول سرویس عہدیدار اپنی صلاحیتوں کو چیالنجوں اور مسائل سے نمٹنے کے لئے متحدہ طور پر استعمال کریں جو ہماری قومی سلامتی کو درپیش ہیں۔ اِسی طرح مسلح افواج کے عہدیداروں کو بھی دستوری چوکھٹے کے تناظر میں جس کے تحت سیاسی عہدیدار اور سیول سرویس عہدیدار کام انجام دیتے ہیں، پیش نظر رکھنا چاہئے۔ پرنب مکرجی نے کہاکہ ایک سوچی سمجھی حکمت عملی تیار کرنی چاہئے جس کا مرکز توجہ جلد از جلد اندرون ملک فوجی آلات اندرون ملک تیار کرنا ہونا چاہئے۔ اُنھوں نے کہاکہ حکومت نے حال ہی میں غیر ملکی راست سرمایہ کاری کی اعظم ترین حد میں اضافہ کردیا ہے۔ یہ اقدام توقع ہے کہ عصری سطح کی دفاعی صنعت اندرون ملک مستحکم کرے گا۔ صدرجمہوریہ نے کہاکہ ہندوستان مسلسل دوستانہ تعلقات تمام پڑوسی ممالک سے قائم کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT