Thursday , October 18 2018
Home / شہر کی خبریں / محکمہ صحت کے تحت چار سال میں صرف چھ جائیدادوں پر تقررات

محکمہ صحت کے تحت چار سال میں صرف چھ جائیدادوں پر تقررات

12 ہزار 487 جائیدادیں مخلوعہ ، اعلامیوں کی اجرائی کے باوجود عدم تقررات سے مسائل
حیدرآباد ۔ 5 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : ریاست کا محکمہ صحت خود بیمار ہوگیا ہے ۔ 4 سال میں صرف 6 جائیدادوں پر تقررات کیے گئے ہیں ۔ محکمہ صحت میں جملہ 12,487 جائیدادیں مخلوعہ ہیں ۔ حکومت نے 7997 جائیدادوں پر تقررات کے لیے منظوری دی ۔ 2411 جائیدادوں پر تقررات کے لیے نوٹیفیکیشن جاری کیا ہے ۔ تاہم صرف 6 جائیدادوں پر ہی تقررات کیے گئے ہیں تلنگانہ کے دارالحکومت حیدرآباد کو ہیلت سٹی بھی کہا جاتا ہے اور حالیہ دنوں میں حیدرآباد میڈیکل ٹورازم کے لیے بھی مشہور ہوا ہے ۔ ملک اور بیرون ممالک سے لوگ حیدرآباد میں علاج کرانے کو ترجیح دے رہے ہیں ۔ حکومت کی جانب سے شعبہ طب کو ترجیحی بنیاد پر اہمیت دینے کا دعویٰ کیا جارہا ہے ۔ کے سی آر کٹس اسکیم متعارف کرانے کے بعد سرکاری دواخانوں میں علاج کرانے کا تناسب 33 فیصد سے بڑھ کر 51 فیصد تک پہونچ گیا ہے تاہم محکمہ صحت میں 12,487 جائیدادیں مخلوعہ ہیں جو تشویش کی بات ہے ۔ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد محکمہ صحت ، بالخصوص ہاسپٹلس میں خدمت انجام دینے والا عملہ بھاری تعداد میں ریٹائرڈ ہوا ہے ۔ لیکن تقررات کا عمل رک گیا ہے ۔ ریاست کے کئی ہاسپٹلس میں ڈاکٹرس نہیں ہے جو بھی ڈاکٹرس ہیں وہ بھی حیدرآباد یا اس کے اطراف و اکناف میں پوسٹنگ کے لیے دباؤ ڈال رہے ہیں ۔ دیہی علاقوں میں خدمات انجام دینے کے لیے تیار نہیں ہے ۔ کے سی آر کٹس اسکیم کی کامیابی سے موجودہ ڈاکٹرس اور دوسرے طبی عملے پر کام کا بوجھ بڑھ گیا ہے ۔ حکومت کی منظوری کے باوجود تقررات نہ ہونے کی کئی وجوہات ہیں ۔ چند تکنیکی مسائل پر حکومت نے ہمدردانہ غور نہیں کیا ۔ جس کی وجہ سے تقررات کا عمل عدالتی کشاکش کا شکار ہوگیا ۔ جن میں ویٹیج، ملازمت کی اہلیت تعلیم کے لیے متحدہ آندھرا پردیش میں جو جی اوز جاری کئے گئے تھے انہیں جی اوز کی بنیاد پر اعلامیہ جاری کیا گیا نئے کورسیس کے بارے میں محکمہ صحت اور تلنگانہ اسٹیٹ پبلک سرویس کمیشن کے درمیان تال میل کا فقدان بھی اصل وجہ بنا ہوا ہے ۔ محکمہ صحت میں مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کو یقینی بنانے کے لیے حکومت پہلے قانونی مسائل پر توجہ دیں ۔ جائیدادوں پر تقررات سے قبل قانونی نکات کا جائزہ لینے کے بعدہی اس کو تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن سے رجوع کریں ورنہ ہر بار نوٹیفیکیشن دیا جائے گا ۔ اس طرح امیدواروں کی جانب سے عدالت سے رجوع ہو کر حکم التواء حاصل کیا جاتا رہے گا ۔۔

TOPPOPULARRECENT