مخالفین کو شکست کا یقین ہوگیا ہے ‘ عوام میں غلط فہمی پیدا کرنے کی سازش

سود خوروں اور غنڈہ عناصر کو رائے دہندوں کو دھمکانے کے خلاف انتباہ ۔ انتخابی جلسہ سے مجید اللہ خاں فرحت کا خطاب
حیدرآباد 26 نومبر ( سیاست نیوز ) صدر مجلس بچاو تحریک و امیدوار حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ مجید اللہ خاں فرحت نے کہا کہ اب خود ان کے مخالفین کو اپنی شکست کا یقین ہوگیا ہے اسی لئے وہ اب ان کے انتخابی نشان کے تعلق سے عوام میں غلط فہمیاں پیدا کرنے کی سازش کر رہے ہیں۔ مجید اللہ خاں فرحت نے کہا کہ حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ میں عوام نے ایک انقلاب برپا کرنے اور مظلوم مسلمانوں کے مسائل کی آواز کو بلند کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے جس کے نتیجہ میں مخالفین حواس باختہ ہوگئے ہیں اور عوام کی تائید سے محروم ہونے کے بعد اب سازشوں کا سہارا لیا جا رہا ہے تاکہ خود کو عوام پر دوبارہ مسلط کرسکیں۔ مجید اللہ خاںفرحت بھوانی نگر میں ایک انتخابی جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے ۔ اس سے قبل دن میں انہوں نے سارے علاقہ اور تمام محلہ جات کا تفصیلی پیدل دورہ کرتے ہوئے رائے دہندوں سے ملاقات کی اور ایم بی ٹی کے حق میں ووٹ دینے کی اپیل کی ۔ پیدل دورہ کے موقع پر عوام نے فرحت خان کو اپنی مکمل تائید کا تیقن دیا ۔ فرحت خان نے اپنے خطاب غنڈہ عناصر اور سود خوروں کو خبردار کیا کہ وہ عوام میں خوف پیداکرنے اور دھمکانے سے گریز کریں ‘ پولنگ کے دن بوگس رائے دہی کی سازشیں نہ کریں ورنہ انہیں منہ توڑ جواب دیا جائیگا ۔ خود حلقہ یاقوت پورہ کے عوام ان سود خوروں ‘ غنڈوں اور مفاد پرستوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہونگے اور حق کی آواز کو بلند کرینگے ۔ انہوں نے مخالفین کو انتباہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ ملت کے مظلوم عوام کے حقوق کی جنگ لڑ رہے ہیں کوئی ذاتی مفادات کی یا اپنے نفس کی لڑائی نہیں لڑ رہے ہیں اگر اس جدوجہد کو ذاتی لڑائی میں تبدیل کردیا گیا تو پھر مخالفین کو اس کا خمیازہ بھگتنا پڑیگا ۔ مجید اللہ خاں فرحت نے پولیس سے بھی اپیل کی کہ وہ انتخابات کو آزادانہ اور منصفانہ بنائیں۔ پولنگ کے دن خاص طور پر رائے دہندوں کو کسی رکاوٹ اور خوف کے بغیر اپنے ووٹ کا استعمال کرنے کا موقع فراہم کریں۔ طاقت کے ذریعہ عوام کو دھمکانے اور بوگس ووٹنگ کروانے والوں پر نظر رکھتے ہوئے ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔ اسی وقت الیکشن حقیقی معنوں میں الیکشن ہوگا ۔ فرحت خان نے کہا کہ حلقہ یاقوت پورہ کو گذشتہ 25 سال میں انتہائی پسماندگی کا شکار کردیا گیا ۔ یہاں نہ کوئی اچھا سرکاری اسکول ہے ‘ نہ دواخانے ہیں ‘ نہ ہیلت سنٹرس ہیں اور نہ ہی یہاں کے نوجوانوں کیلئے کوئی منصوبہ ہے ۔ نوجوانوں کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنا چاہئے اور حالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے ایم بی ٹی کے حق میں ووٹ کا استعمال کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ کے عوام کی سرپرستی میں ان کی کامیابی یقینی ہے اور جب وہ ایوان اسمبلی میں جائیں گے تو ہر رائے دہندہ محسوس کریگا کہ خود اسکی آواز اسمبلی میں گونج رہی ہے ۔ اس کے مسائل کو ایوان میں پیش کیا جار ہا ہے ۔ اس کے حقوق پر ایوان میں جدوجہد کی جا رہی ہے ۔ وہ کسی ذاتی مفاد اور جائیداد و اثاثے بنانے کیلئے انتخابی میدان میں نہیں ہیں بلکہ ملت مظلوم کو اس کے حقوق دلانے کیلئے جدوجہد کر رہے ہیں اور اسی مقصد سے انتخاب لڑ رہے ہیں۔ وہ اپنی لڑائی کو مسلمانوں کے تمام حقوق دلانے تک جاری رکھیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ مخالفین انہیں شکست دینے دولت بانٹنے کے منصوبے بنا رہے ہیں۔ ’ چاند رات ‘ کو دولت کا استعمال کرنے کے ارادے ہیں لیکن وہ دولت اور طاقت کے غرور کو چکنا چور کرتے ہوئے غریب اور مظلوم مسلمانوں کے ووٹوں سے اور ان کی سرپرستی سے شاندار کامیابی حاصل کرینگے اور ریاست میں سماجی انصاف کی جدوجہد کا آغاز حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ کے انقلابی نتیجہ سے ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT