Tuesday , December 11 2018

مختلف شعبوں میں ہند۔آسیان تعاون میں اضافہ

نے پی ٹا(میانمار) 10اگست ( سیاست ڈاٹ کام) آسیان جو دنیا کے تیز ترین رفتار سے فروغ پدیر علاقوں میں شامل ہے ‘ آج عہد کیا کہ بحری صیانت ‘ دہشت گردی ‘ منشیات کی اسمگلنگ اور سائبرجرائم کے علاوہ اُن کے مقابلے میں تعاون میں اضافہ کے علاوہ تجارتی تعلقات میں وسعت پیدا کی جائے گی اور ہندوستان کے ساتھ نمایاں تعاون میں اضافہ کیاجائے گا ۔ 10رکنی گر

نے پی ٹا(میانمار) 10اگست ( سیاست ڈاٹ کام) آسیان جو دنیا کے تیز ترین رفتار سے فروغ پدیر علاقوں میں شامل ہے ‘ آج عہد کیا کہ بحری صیانت ‘ دہشت گردی ‘ منشیات کی اسمگلنگ اور سائبرجرائم کے علاوہ اُن کے مقابلے میں تعاون میں اضافہ کے علاوہ تجارتی تعلقات میں وسعت پیدا کی جائے گی اور ہندوستان کے ساتھ نمایاں تعاون میں اضافہ کیاجائے گا ۔ 10رکنی گروپ نے خاص طور پر ہندوستان کے ساتھ مذکورہ بالا شعبوں میں تعاون میں اضافہ کی ضرورت پر زور دیا ۔ آسیان گروپ کے ایک تبصرے جن سے متعلق تنازعہ سے ایک دن قبل منظر عام پر آئے ہیں۔ جنوبی بحرچین کے بیشتر علاقہ پر چین کی ملکیت کے دعویٰ سے علاقائی ممالک کے ساتھ اس کا تنازعہ پیدا ہوگیا ہے ۔ طاقتور گروپ آسیان کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں یہی موضوع غالب رہا ۔ آسیان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہم نے بحری تعاون میں اضافہ سے اتفاق کیا ہے تاکہ بحری مسائل اور مشترکہ چیالنجس کا سامنا کیا جاسکے ۔

12ویں ہند۔ آسیان کانفرنس میں وزیر خارجہ سشما سوراج نے کل کہا تھا کہ ہندوستان جہاز رانی کی آزادی اور جنوبی بحرچین میں وسائل تک رسائی سے بین الاقوامی قانون کے اصولوں کے مطابق اتفاق کرتا ہے ۔ ان میں 1982ء کا اقوام متحدہ کا کنونشن برائے سمندری قانون بھی شامل ہے ۔ چین ہندوستان کی متنازعہ آبی حدود میں تیل کی تلاش کے پراجکٹس پر اعتراض کرتا رہا ہے ۔ آسیان نے کہا کہ رکن ممالک کے ہندوستان کے ساتھ بین قومی اور غیر روایتی صیانتی چیالنجس سے نمٹنے کے سلسلہ میں تعاون کیا جائے گا ۔اس سلسلہ میں دہشت گردی کا مقابلہ کرنے بہتر تعاون واضح طور پر طلب کیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT