Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / مختلف علاقوں کے ہفتہ واری بازار شہریوں کے لیے وبال جان

مختلف علاقوں کے ہفتہ واری بازار شہریوں کے لیے وبال جان

جھگڑوں اور ٹریفک میں اضافہ، معمول کی وصولی ، پولیس چوکس
حیدرآباد۔17 جنوری(سیاست نیوز) دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے مختلف علاقو ںمیں لگائے جانے والے بازار عوام کیلئے راحت سے زیادہ شہریوں کے لئے تکلیف کا سبب بننے لگے ہیں اور سڑکوں پر لگائے جانے والے ان بازاروں کے متعلق اب محکمہ پولیس نے سرگرم ہونے کا منصوبہ تیار کرنا شروع کردیا ہے کیونکہ رہائشی علاقوں میں لگائے جانے والے ان بازاروں کے سبب محلہ جات میں جھگڑے اورٹریفک کے مسائل پیدا ہونے شروع ہوچکے ہیں اور شہریوں کی جانب سے شکایات کی جانے لگی ہیں۔ بتایاجاتاہے کہ ہفتہ واری بازاروں سے معمول کی وصولی اور علاقہ کے بااثر افراد کے ان معاملوں میں مداخلت کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن اب اس رجحان میں زبردست اضافہ کے سبب علاقہ واری اساس پر شکایات موصول ہونے لگی ہیں اور راہگیروں کی جانب سے بھی شکایات کی جانے لگی ہیں۔ بتایاجاتاہے کہ ہفتہ واری بازار سے مقامی عوام کو سہولت حاصل ہورہی ہے لیکن جس جگہ یہ بازار لگائے جا رہے ہیں اس مقام پر موجود مکینوں کو ان بازاروں سے شکایات ہونے لگی ہیں ۔ شہر حیدرآباد و سکندرآباد کے علاوہ نواحی علاقو ںمیں بھی ترکاری و دیگر اشیاء کی فروخت کے سلسلہ میں ہفتہ واری بازاروں کے کلچر میں گذشتہ دو تا تین برسوں کے دوران اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور ان ہفتہ واری بازاروں میں تجارت کرنے والوں نے حکومت اور منتخبہ عوامی نمائندوں سے بھی اپیل کی ہے کہ وہ انہیں ہفتہ واری بازار لگانے کی محلہ جات میں جگہ مختص کریں تاکہ ان کے کاروبار کے سبب کوئی رکاوٹ نہ پیدا ہونے پائے۔ تاجرین کا کہناہے کہ بعض علاقوں میں مکینوں اور راہگیروں کو ان بازارو ں سے شکایت ہو رہی ہے لیکن ان کے ہی علاقہ کے عوام کو سہولت حاصل ہونے کے سبب وہ خاموش ہیں لیکن بعض مقاما ت پر جگہ کی تنگی کے سبب راہگیر الجھ رہے ہیں لیکن اس بات کا جائزہ لیا جارہاہے کہ کس طرح سے اس مسئلہ سے نمٹا جائے۔بتایاجاتا ہے کہ ان بازاروں کے متعلق متعدد شکایات موصول ہونے لگی ہیں اور محکمہ پولیس و ٹریفک پولیس کی جانب سے اب اس بات پر غور کیا جانے لگا ہے کہ کس طرح ان بازارو ں میں تجارت کرنے والوں کو نقصان پہنچائے بغیر ان مسائل کو حل کیا جاسکتا ہے کیونکہ غریب ترکاری فروشوں کا یہ معمول روز کا نہیں ہے بلکہ ہفتہ میں ایک مرتبہ وہ رہائشی علاقو ں میں بازار لگا رہے ہیں اسی لئے محکمہ پولیس اس سلسلہ میں متبادل انتظام کے متعلق غور کر رہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT