مختلف یونیورسٹیز کے سینکڑوں طلبہ کی کانگریس میں شمولیت

عثمانیہ یونیورسٹی کو جیل میں تبدیل کرنے چیف منسٹر پر الزام ، اتم کمار ریڈی ، کنٹیا اور ملو بٹی وکرامارک کا خطاب
حیدرآباد ۔ 22 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : مختلف یونیورسٹیز کے سینکڑوں طلبہ نے آج گاندھی بھون پہونچکر صدر تلنگانہ کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی سے ملاقات کرتے ہوئے کانگریس میں شمولیت اختیار کی ۔ ورکنگ پریسیڈنٹ ملو بٹی وکرامارک نے عثمانیہ یونیورسٹی کو جیل میں تبدیل کردینے کا چیف منسٹر کے سی آر پر الزام عائد کیا ۔ گاندھی بھون میں منعقدہ اس تقریب میں سکریٹری انچارج تلنگانہ کانگریس امور آر سی کنٹیا اے آئی سی سی ، ایس سی سیل کے صدر نشین کے راجو ورکنگ پریسیڈنٹ ملو بٹی وکرامارک کے علاوہ دوسرے قائدین موجود تھے۔ اس موقع پر طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کہا کہ طلبہ اور سرکاری ملازمین کے احتجاج سے متاثر ہو کر صدر کانگریس سونیا گاندھی نے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دیا ہے ۔ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل میں طلبہ کی قربانیاں بھی ناقابل فراموش ہیں ۔ تحریک میں طلبہ اور بیروزگار نوجوانوں کو لاکھوں ملازمت فراہم کرنے کا وعدہ کرتے ہوئے چیف منسٹر کے سی آر نے دھوکہ دیا ہے ۔ ٹی آر ایس اقتدار کے 40 ماہ مکمل ہوچکے ہیں ۔ مگر چیف منسٹر نے طلبہ اور نوجوانوں سے کیے گئے وعدے کو پورا نہیں کیا ہے ۔ طلبہ کے فیس ری ایمبرسمنٹ کے بقایا جات کو جاری نہیں کیا گیا ۔ مخلوعہ جائیدادوں اور ملازمتوں کی فراہمی کے معاملے میں وزراء کے بیانات میں تضاد ہے ۔ ڈی ایس سی کے معاملے میں جھوٹ پر جھوٹ بولا جارہا ہے ۔ ابھی تک 200 مرتبہ ترمیمات کی گئی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ 2019 میں کانگریس پارٹی بھاری اکثریت سے کامیاب ہوگی اور طلبہ و نوجوانوں سے مکمل انصاف کرنے کا تیقن دیا ۔ ملو بٹی وکرامارک نے کہا کہ تلنگانہ میں اہم رول ادا کرنے والی عثمانیہ یونیورسٹی کو حکومت تلنگانہ نے اوپن جیل میں تبدیل کردیا ہے ۔ طلبہ کو نئے نئے تجربات کرنے کے لیے فنڈز جاری نہیں کئے جارہے ہیں ۔ تلنگانہ تحریک کا سہارا لیتے ہوئے چیف منسٹر نے سماج کے تمام طبقات کے جذبات سے کھلواڑ کیا ہے ۔ سنہرے تلنگانہ کا نعرہ کے سی آر کے ارکان خاندان تک محدود ہوگیا ہے ۔ انچارج تلنگانہ کانگریس امور آر سی کنٹیا نے تلنگانہ کی تحریک میں کلیدی رول ادا کرنے والے طلبہ کو دھوکہ دینے کا چیف منسٹر تلنگانہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ جن طلبہ نے ٹی ار ایس کو اقتدار پر لانے میں اہم رول ادا کیا ہے وہی طلبہ ٹی آر ایس کے زوال کا موجب بن جائیں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT