Sunday , July 22 2018
Home / عرب دنیا / مدرسہ سے فرار بچہ کی زدوکوبی سے ہلاکت

مدرسہ سے فرار بچہ کی زدوکوبی سے ہلاکت

کراچی ۔ 22 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ایک پاکستانی عالم دین (مولوی صاحب) کو مبینہ طور پر ایک دینی مدرسہ کے آٹھ سالہ طالب علم کو بری طرح زدوکوب کرتے ہوئے ہلاک کردینے کی پاداش میں گرفتار کرلیا گیا۔ دریں اثناء پولیس کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا کہ محمد حسین نامی طالب علم جب دینی مدرسہ سے بھاگنے کی کوشش کررہا تھا تو اسے مولوی صاحب نے دوڑ کر پکڑ لیا۔ بن قاسم نامی مستقر میں واقع اس مدرسہ میں زیرتعلیم بچہ قبل ازیں بھی فرار ہونے کی کوشش کرچکا تھا تاہم اس کے والدین اسے دوبارہ مدرسہ میں لے آئے تھے۔ قاری نجم الدین نے اسے چھڑی اور ایک دیگر نوکیلی اور کھردری شئے سے بری طرح زدوکوب کیا جس سے طالب علم کے پورے جسم پر نشان پڑ گئے جس کی وجہ سے وہ جانبر نہ ہوسکا۔ متوفی کے والدین نے پوسٹ مارٹم نہ کرنے کی خواہش ظاہر کی۔ یاد رہیکہ پاکستان میں مذہبی مدارس کی کوئی کمی نہیں ہے۔ ہر گلی اور نکڑ پر کوئی نہ کوئی مذہبی مدرسہ نظر آجاتا ہے جہاں ایسے غریب والدین مہنگی اسکولوں میں اپنے بچوں کو تعلیم دلانے کے موقف میں نہیں ہوتے، وہ مدارس میں انہیں داخل کردیتے ہیں۔ حالیہ دنوں میں بعض دینی مدارس کو بچوں کو انتہاء پسندی اور دہشت گردی کی جانب راغب کرنے کی وجہ سے بند کردیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT