Tuesday , June 26 2018
Home / سیاسیات / مدھو سودن مستری اور بی جے پی کے درمیان پوسٹر جنگ جاری

مدھو سودن مستری اور بی جے پی کے درمیان پوسٹر جنگ جاری

وڈودرا 7 اپریل (سیاست ڈاٹ کام)کانگریس کے وڈودرا سے امیدوار مدھو سودن مستری اور بی جے پی کے درمیان پوسٹر کی جنگ جاری ہے کیونکہ بی جے پی نے پسپا ہونے سے انکار کردیا ہے۔بھگوا پارٹی اب مطالبہ کررہی ہے کہ راہول گاندھی کی تصویریں شائع کرنے کے اخراجات ظاہر کئے جائیں جو مستری کے ہمراہ شائع کی گئی ہے انہیں ان کے شخصی اخراجات میں شامل کیا جائے

وڈودرا 7 اپریل (سیاست ڈاٹ کام)کانگریس کے وڈودرا سے امیدوار مدھو سودن مستری اور بی جے پی کے درمیان پوسٹر کی جنگ جاری ہے کیونکہ بی جے پی نے پسپا ہونے سے انکار کردیا ہے۔بھگوا پارٹی اب مطالبہ کررہی ہے کہ راہول گاندھی کی تصویریں شائع کرنے کے اخراجات ظاہر کئے جائیں جو مستری کے ہمراہ شائع کی گئی ہے انہیں ان کے شخصی اخراجات میں شامل کیا جائے ۔ بی جے پی کے انچارج امور وڈودرا لوک سبھا انتخابات سوربھ پٹیل نے کہا کہ یہ بڑے بڑے پوسٹر جو شہر کے مختلف علاقوں میں گذشتہ ہفتہ سے نظر آرہے ہیں جبکہ مستری نے اپنا پرچہ نامزدگی داخل کیا تھا ان کا خرچ مستری کے شخصی حساب میں شامل کیا جانا چاہئے ۔ راہول کے با اعتماد ساتھی مدھو سودن مستری نریندر مودی کے خلاف مقابلہ کررہے ہیں انہیں ان کے حامیوں کے ساتھ فسادات کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا جبکہ انہوں نے مودی کے پوسٹرس چاک کردیئے تھے ۔ بعدازاں مجسٹریٹ نے انہیں فی کس پانچ ہزار روپئے کے مچلکہ پر رہا کیا تھا۔ مستری اور بی جے پی کے درمیان پوسٹرس کی جنگ اس وقت شروع ہوئی جبکہ بی جے پی نے ریاست کے تمام اشتہاری ڈبوں کو جو وڈودرا مجلس بلدیہ کی جانب سے نصب کئے تھے اور جن پر مودی کے پوسٹرس چسپاں تھے۔ ان پوسٹرس کو پھاڑ کر پھینک دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT