Monday , June 25 2018
Home / سیاسیات / مدھیہ پردیش میں حصول اقتدار کیلئے کانگریس کمربستہ

مدھیہ پردیش میں حصول اقتدار کیلئے کانگریس کمربستہ

مجالس مقامی انتخابات میں کامیابی سے کیڈر کے حوصلے بلند، صدر پردیش کانگریس کا بیان

بھوپال 22 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ریاست مدھیہ پردیش میں تقریباً دیڑھ دہے تک اقتدار سے باہر رہنے کے بعد کانگریس پارٹی اِس بار ابھی سے ہی اسمبلی انتخابات کی تیاریوں میں جُٹ گئی ہے۔ مدھیہ پردیش میں جہاں جاریہ سال کے اواخر میں مجوزہ اسمبلی انتخابات متوقع ہے کانگریس نے اعلان کیا ہے کہ وہ بی جے پی کو اقتدار سے باہر کرنے کے لئے اپنی ہم خیال پارٹیوں کے ساتھ انتخابات کا سامنا کرنے تیار ہے۔ اِس حوالہ سے انتخابی تیاریوں کی شروعات کرتے ہوئے پارٹی نے ممکنہ مشکل نشستوں پر کھڑا کئے جانے والے امیدواروں کی نشاندہی پر غور و خوص شروع کردیا ہے اور توقع ہے کہ مارچ تک یہ کام مکمل کرلیا جائے گا۔ ریاستی کانگریس جنرل سکریٹری دیپک بابریا نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ عام طور پر لمحہ آخر میں نشستوں کے بارے میں فیصلہ کیا جاتا ہے تاہم میں نے اِس مسئلہ پر ریاستی قائدین کے ساتھ صلاح و مشورہ شروع کردیا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ ابتداء میں ہم ایسی نشستوں پر توجہ مرکوز کررہے ہیں جہاں سے پچھلے تین چار انتخابات میں ہماری پارٹی کو کامیابی نہیں مل سکی ہے۔ اِس لئے ہم ایسے امیدوار کی پیشگی طور پر نشاندہی کرنے کی کوشش کررہے ہیں تاکہ اُنھیں انتخابی مہم کے لئے خاطر خواہ وقت مل جائے۔ تاہم دیپک بابریا نے ریاست میں چیف منسٹر امیدوار کے ناموں کا انکشاف کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہاکہ وہ فی الحال اِس موضوع پر کچھ نہیں کہہ سکتے۔ مناسب موقع پر وہ عوام کو ضرور اِس بات سے آگاہ کریں گے۔ انھوں نے الزام عائد کیاکہ بی جے پی وزارت اعلیٰ کے امیدوار کے معاملہ میں عوام کے درمیان شکوک و شبہات پھیلارہی ہے۔ یہ پوچھے جانے پر کہ پارٹی نے جس طرح پنجاب میں چیف منسٹر کے امیدوار کا نام پہلے ہی اعلان کردیا تھا، کیا ویسا ہی یہاں بھی کیا جائے گا۔ اُنھوں نے کہاکہ وقت کے حساب سے جو مناسب ہوگا ہم کریں گے تاہم فی الحال اِس موضوع پر ابھی کچھ کہہ نہیں سکتے۔ واضح رہے کہ مدھیہ پردیش کی 230 رکنی اسمبلی میں کانگریس 2003 ء سے اقتدار سے باہر ہے۔ واضح رہے کہ پارٹی کا ایک گوشہ چیف منسٹر کے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کرنے کا مطالبہ کررہا ہے جہاں سے بی جے پی نے پچھلے تین انتخابات میں مسلسل کامیابی حاصل کی ہے۔ لوک سبھا میں کانگریس چیف وہپ اور سینئر قائد جیوتر آدتیہ سندھیا نے کھلے عام مطالبہ کیا ہے کہ پارٹی اِس اعلیٰ عہدے کے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کرے۔ حالیہ مقامی انتخابات میں کانگریس کی زبردست کامیابی کے حوالہ سے پوچھے جانے پر اُنھوں نے کہاکہ یہ کامیابی کانگریس کارکنوں کی سخت محنت کا نتیجہ ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ حالیہ انتخابات میں کانگریس کی کامیابی نے یہ ثابت کردیا ہے کہ بی جے پی اپنی زمین کھو رہی ہے۔ خاص کر ایسی نشستوں پر جہاں پر چیف منسٹر مدھیہ پردیش شیوراج چوہان نے بذات خود انتخابی مہم چلائی تھی وہاں بھی کانگریسی امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے۔ یہ نتیجہ عوامی رجحان کی عکاس ہے جو آنے والے اسمبلی انتخابات میں بھی برقرار رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT