Tuesday , January 23 2018
Home / ہندوستان / مدھیہ پردیش میں چرچ نشانہ ، ہندو تنظیموں کی کارروائی

مدھیہ پردیش میں چرچ نشانہ ، ہندو تنظیموں کی کارروائی

جبلپور ؍ ممبئی ۔ /22 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش کے جبلپور میں آج کیتھیڈرل اور کیتھولک اسکول کے احاطہ کو نشانہ بنایا گیا جہاں مذہبی پروگرام میں لوگ جمع تھے ۔ ہندو کارکنوں نے مبینہ طور پر تباہی مچائی ۔ یہ واقعہ ایسے وقت پیش آیا جبکہ ایک دن قبل مہاراشٹرا میں چرچ پر حملہ کیا گیا تھا اور ہنوز کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ۔ پولیس نے کہ

جبلپور ؍ ممبئی ۔ /22 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش کے جبلپور میں آج کیتھیڈرل اور کیتھولک اسکول کے احاطہ کو نشانہ بنایا گیا جہاں مذہبی پروگرام میں لوگ جمع تھے ۔ ہندو کارکنوں نے مبینہ طور پر تباہی مچائی ۔ یہ واقعہ ایسے وقت پیش آیا جبکہ ایک دن قبل مہاراشٹرا میں چرچ پر حملہ کیا گیا تھا اور ہنوز کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ۔ پولیس نے کہا کہ جبلپور میں یہ واقعہ /20 اور /21 مارچ کی درمیانی شب پیش آیا جس میں عیسائی فرقے کے بعض ارکان پر حملہ کیا گیا ۔ بجرنگ دل اور دھرم سینا نے اسکول پر بھی حملہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ یہاں مبینہ طور پر مذہب تبدیل کیا جارہا ہے ۔ پولیس کے مطابق اس واقعہ کے سلسلے میں کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ۔ اسی طرح نوی ممبئی میں پیش آئے واقعہ کے تعلق سے بھی پولیس نے بتایا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں دو نقاب پوش افراد کو دیکھا گیا جنہوں نے سینٹ جارج کیتھولک چرچ پر پتھر پھینکے ۔ اس واقعہ میں کوئی عینی گواہ نہیں ہے اور سی سی ٹی وی فوٹیج کے ذریعہ حملہ آوروں کی شناخت میں کوئی مدد نہیں ملی ۔ تاہم چیف منسٹر مہاراشٹرا دیویندر فرنویس نے کہا کہ مجرمین کو جلد گرفتار کیا جائے گا ۔ جبلپور میں پولیس نے دھرم سینا لیڈر اور چند دیگر کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے لیکن عیسائیوں نے گرفتاری میں تاخیر کی وجہ جاننا چاہی۔

TOPPOPULARRECENT