Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / مدینہ منورہ میں حیدرآبادی حاجی کی رہائی

مدینہ منورہ میں حیدرآبادی حاجی کی رہائی

وطن واپسی کی اجازت ، حاجی کے افراد خاندان کا اظہار تشکر
حیدرآباد۔/13اکٹوبر، ( سیاست نیوز) مدینہ منورہ میں جن حیدرآبادی حاجی کو فنگر پرنٹ میں یکسانیت نہ پائے جانے پر ایمیگریشن حکام نے روک لیا تھا ان کی رہائی کی راہ آخر کار ہموار ہوچکی ہے۔ ایمیگریشن حکام نے فنگر پرنٹ کو کلیرنس دیتے ہوئے وطن واپسی کی اجازت دے دی ہے۔ بھولکپور مشیرآباد سے تعلق رکھنے والے 62 سالہ حاجی بشیر الدین کو 10 اکٹوبر کی رات مدینہ منورہ ایر پورٹ پر روک لیا گیا تھا کیونکہ ان کا فنگر پرنٹ ایسے شخص سے میچ ہوگیا جو سعودی پولیس کو مطلوب ہے۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کی توجہ دہانی پر ہندوستانی کونسلیٹ اور حج مشن کے حکام نے سعودی عہدیداروں سے ربط قائم کیا اور رہائی کی کوشش کی ۔ بتایا جاتا ہے کہ ایمیگریشن حکام نے دوبارہ فنگر پرنٹ حاصل کرنے کا فیصلہ کیا اور دوسرے فنگر پرنٹ میں حاجی بشیر الدین کو کلین چٹ دے دی گئی۔ یہ مرحلہ کل رات دیر گئے مکمل ہوا ۔ حاجی بشیر الدین کے ہمراہ ان کے فرزند فہیم الدین بھی مدینہ منورہ میں ہیں۔ انہوں نے پروفیسر ایس اے شکور سے ربط قائم کرتے ہوئے والد کی رہائی کے اقدامات پر اظہار تشکر کیا۔ اس طرح چار دن بعد حاجی بشیر الدین کی واپسی کی راہ ہموار ہوئی ہے۔ ہندوستانی کونسلیٹ اور حج مشن کی جانب سے انہیں بنگلور یا ممبئی روانہ کرنے کے انتظامات کئے جارہے ہیں تاہم فرزند نے ممبئی کے سفر کو ترجیح دی ہے۔ توقع ہے کہ اندرون دو یوم وہ وطن واپس ہوں گے۔ حاجی بشیر الدین کے ہمراہ ان کی اہلیہ اور بہو بھی موجود تھیں تاہم وہ مقررہ وقت پر حیدرآباد واپس ہوگئیں۔ حاجی بشیر کی رہائی پر افراد خاندان نے اطمینان کی سانس لی ہے اور انہوں نے پروفیسر ایس اے شکور کی مساعی کی ستائش کی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT