Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / مذہبی آویزشوں کیلئے شدت پسند عناصر ذمہ دار

مذہبی آویزشوں کیلئے شدت پسند عناصر ذمہ دار

The Prime Minister, Shri Narendra Modi arrives at Mahabodhi Temple, in Bodh Gaya on September 05, 2015.

گوتم بدھ کے پیام کو عام کرنے کی ضرورت ۔ وزیراعظم نریندر مودی کا خطاب

بودھ گیا 5 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا ہے کہ اگر کوئی اپنے مذہب پر صدق دل سے عمل کرتا ہے تو کوئی مسئلہ نہیں پیدا ہوگا لیکن مذہبی آویزشیں اور تصادم اس وقت بھڑک جاتے ہیں جب شدت پسند عناصر دوسروں پر اپنے نظریات مسلط کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ مہا بودھی ٹمپل میں ہندو ۔ بدھ مت کانفرنس کے مندوبین سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہاکہ دونوں مذاہب کے پیشوا (اسکالرس) جنھوں نے دہلی میں اختتام پذیر اجتماع میں شرکت کی ہے، یہ وعدہ کیا ہے کہ ایشیاء اور دیگر علاقوں میں تصادموں کو ٹالنے اور ماحولیاتی بیداری کے نظریہ کو تقویت پہنچانے کے لئے کام کریں گے۔ باور کیا جاتا ہے کہ 2 روزہ کانفرنس میں مذکورہ مسائل پر وسیع تر اتفاق رائے پایا گیا۔ ایک مذہبی آویزشوں کا تھا جسے شرکاء کانفرنس نے مذہبی عدم رواداری کا نتیجہ قرار دیا۔ دوسرا مسئلہ پسندیدہ مذہب پر عمل آوری کی آزادی کا تھا۔ یہ مسئلہ اس وقت تصادم کا رُخ اختیار کرجاتا ہے

جب شدت پسند عناصر دیگر لوگوں پر اپنے نظریات مسلط کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ وزیراعظم نریندر مودی نے بتایا کہ اس کانفرنس کا اصل موضوع (تھیم) ہندو ۔ بدھسٹوں کی تہذیب و ثقافت کے روشن امکانات، تصادموں کے تدارک اور فلسفہ اور ماحولیاتی بیداری کے نظریہ کو فروغ دینا تھا۔ دہلی کانفرنس کی میزبانی، ویویکانند انٹرنیشنل فاؤنڈیشن اور ٹوکیو فاؤنڈیشن نے انٹرنیشنل بدھسٹ کانفیڈریشن کے تعاون سے کیا گیا تھا۔ انھوں نے کہاکہ یہ ایک غیر معمولی تبدیلی ہے کہ ایشیاء معاشی اور تہذیبی طاقت کے طور پر اُبھر رہا ہے اور اس فیصلہ کا خیرمقدم کیاکہ مذکورہ نوعیت کی مزید کانفرنسیں دیگر بدھسٹ ممالک بشمول آئندہ سال جنوری میں ٹوکیو فاؤنڈیشن کے زیراہتمام منعقد کی جائے گی۔ وزیراعظم نے بودھ گیا کو مینار نور قرار دیتے ہوئے کہاکہ حکومت اس مقام کو روحانی مرکز کی حیثیت سے فروغ دے گی تاکہ وہ ہندوستان اور دیگر بدھسٹ دنیا کے درمیان تہذیب و ثقافت کے رابطہ کا کام کرے۔ انھوں نے بتایاکہ گوتم بدھ اور لارڈ کرشنا کے نظریات میں یکسانیت پائی جاتی ہے۔ جس طرح بھگوان کرشنا نے مہا بھارت کی عظیم لڑائی سے قبل ایک زندہ جاوید پیام دیا تھا۔ اسی طرح گوتم بدھ نے بھی جنگ سے باز آجانے کی نصیحت کرتے ہوئے عدم تشدد کا پیام دیا تھا۔

مدر ٹریسا کو خراج عقیدت
پڈوچیری 5 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر انتظام علاقہ پڈوچیری میں اسمبلی اسپیکر وی سبھا پتی کی قیادت میں آج یہاں مجسمہ مدر ٹریسا پر ان کی 18 ویں برسی کے موقع پر گلہائے عقیدت پیش کیا گیا۔ وہ ہندوستان میں خیراتی اداروں کی روح رواں تھیں۔ وزیر بہبود سیاحت پی راجہ ویلو، حکمراں AINRC کے ارکان اسمبلی اور مختلف تنظیموں کے نمائندوں نے بھی مدر ٹریسا کو خراج عقیدت پیش کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT