Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / مذہب یاذات کے نام پر کوئی تفریق نہیں ہوگی:یوگی

مذہب یاذات کے نام پر کوئی تفریق نہیں ہوگی:یوگی

میرٹھ، 9مئی (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی ادتیہ ناتھ نے آج یہاں عوام کو یقین دلایا کہ ریاست میں اب کسی کے ساتھ بھی مذہب یا ذات کے نام پر تفریق نہیں کیا جائے گا۔وزیر اعلی بننے کے بعد پہلی مرتبہ میرٹھ کے دورے پر آئے یوگی نے کھرکھودا کے گیہوں فروخت مرکز اور کچی بستی کا دورہ کیا اور میرٹھ میڈیکل کالج کا معائنہ کرنے کے بعد لوگوں سے خطاب کیا۔ بھیسالی میدان میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے یوگی نے کہاکہ اب مذہب اور ذات کی بنیاد پر کسی کے ساتھ تفریق نہیں کی جائے گی۔ انگریزوں نے ہمیں مذہب کے نام پر لڑایا لیکن ہمیں ترقی کے لئے مذہب اور ذات سے اوپر اٹھنا ہوگا۔ یوگی نے کہا کہ اترپردیش میں اب ہر حال میں قانون کا ہی راج ہوگا۔ کسی کو بھی قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔مجرموں کی شکایت پولیس میں کرنے پر فوراً کارروائی ہوگی اور مجرموں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا۔ انہوں نے پولیس نظم میں تبدیلی کرکے کے ڈائریکٹر جنرل پولیس کی جگہ ایڈیشنل پولیس ڈائریکٹر جنرل کو تعینات کئے جانے کی بھی وکالت کی۔وزیر اعلی نے کہا کہ اینٹی رومیو اسکواڈ کو سختی سے کام کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ اب ہر بیٹی کو اسکول جانے میں کوئی پریشان نہیں کرے گا اور اگر ایسا ہوتا ہے تو اس کے خلاف فوراً کارروائی کرکے جیل بھیج دیا جائے گا۔ ہرضلع کے قانون و انتظام کا جائزہ لینے کے لئے ایک انچارج وزیر ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ریاست میں کسانوں کے ساتھ ناانصافی نہیں ہونے دی جائے گی ۔ ایک ماہ میں کسانوں کے گنے کا 6200کروڑ روپے کی ادائیگی کر دی جائے گی۔ ریاست کے کسانوں کو اپنے گیہوں بازار میں اچھی قیمت پر فروخت کرنے کی چھوٹ دینے کے ساتھ ہی سرکاری خرید مراکز پر ان کو اپنی فصل فروخت کرنے کے مواقع دئے گئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT