Saturday , September 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / مرض ٹی بی کے انسداد کیلئے مبسوط منصوبہ عمل

مرض ٹی بی کے انسداد کیلئے مبسوط منصوبہ عمل

کریم نگر میں ڈسٹرکٹ میڈیکل آفیسر ڈاکٹر کومرم بالو کا خطاب

کریم نگر میں ڈسٹرکٹ میڈیکل آفیسر ڈاکٹر کومرم بالو کا خطاب

کریم نگر۔/23مارچ،( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) متعدی مرض ٹی بی ( دِق) کے خاتمہ کے مقصد سے مبسوط منصوبہ عمل کے تحت اقدامات کئے جارہے ہیں اور اس سلسلہ میں کافی حد تک کامیابی بھی حاصل کی جارہی ہے۔ ڈسٹرکٹ میڈیکل اینڈ ہیلت آفیسر کومرم بالو اور ڈی ٹی سی او اڈلے راجیشم نے ڈی ایم ایل ایچ او کے چیمبر میں منعقدہ پرنٹ اینڈ الکٹرانک میڈیا کو واقف کروایا۔انہوں نے کہاکہ ٹی بی کا مرض موروثی نہیں ہوتا بلکہ یہ لاحق ہونے کی مختلف وجوہات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی بی سے متاثرہ مریض کے کھانسنے، تھوکنے کے دوران اس کے جراثیم دوسرے شخص کی سانس کے ساتھ داخل ہوجاتے ہیں اس کی روک تھام ہر ایک کی بنیادی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی بی کے مریضوں کی شناخت، تشخیص اور ان کے علاج کیلئے ہر ممکنہ کوشش کی جارہی ہے اور اس سلسلہ میں ہر سال 24 مارچ کو’’ عالمی یوم انسداد ٹی بی ‘‘ منعقد کیا جاتا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ دنیا بھر میں تاحال 20کروڑ افراد متاثر ہوچکے ہیں اور ہر سال ایک کروڑ افراداس مرض سے متاثر ہورہے ہیں۔ ہندستان بالخصوص یہاں کی آبادی کا 40فیصد مرض ٹی بی سے متاثر ہے جس میں سالانہ دس لاکھ افراد کا اضافہ ہورہا ہے۔انہوں نے کہا کہ دیگر امراض سے زیادہ ٹی بی سے اموات ہورہی ہیں۔

ہر سال ہندوستان بھر میں 307 افراد مرض ٹی بی سے فوت ہورہے ہیں اور اوسطاً روزانہ ایک ہزار افراد اور ہر تین منٹ میں ٹی بی کا ایک مریض فوت ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک اندازہ کے مطابق ہندوستان میں 70ہزار یم ڈی آر ٹی بی کے مریض ہیں۔2012 تک ان کا علاج کروائے جانے کی کوشش کے سلسلہ میں 2010ء میں ریاست میں ایم ڈی آر علاج فراہم کیا گیا۔ ٹی بی سے متاثرہ 15 ہزار مریضوں کی نشاندہی کرتے ہوئے4800 اموات پر قابو پایا گیا اور اب یہ تعداد 2800 تک پہنچ گئی ہے۔1998ء سے ٹی بی کے علاج میں کئی ایک اصلاحات اور عصری طریقہ کار سے 2004ء سے ریاست بھر میں کامیاب علاج کیا جارہا ہے۔دیہی مقامات پر آر ایم پی ڈاکٹرس کو ٹی بی کے مریضوں کو مفت انجکشن دینے اور ادویات دینے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ انجیکشن، ادویات ، گولیاں حکومت کی جانب سے فراہم کی جارہی ہیں۔ آشا ورکرس کو بھی ٹی بی کے مریضوں کو روزانہ گولیاں کھلانے کی ذمہ داری دی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT