Tuesday , September 25 2018
Home / سیاسیات / مرکزکا اپنی اسکیموں کے تحت فنڈ س جاری کرنے سے انکار

مرکزکا اپنی اسکیموں کے تحت فنڈ س جاری کرنے سے انکار

سلی گوڑی (مغربی بنگال)20 جنوری (سیاست ڈاٹ کام )چیف منسٹر مغربی بنگال ممتابنرجی نے آج مرکز پر الزام عائد کیا کہ وہ ریاستی حکومت کو مختلف مرکزی اسکیموں کے تحت جیسے جے این این یو آر این ،غذائی اجناس کی خریداری اور 100 روزہ کام کے پروگرام کیلئے فنڈس جاری کرنے سے انکار کررہا ہے ۔ ممتابنرجی نے کہا کہ یہ فنڈس ہمارا حق ہیں وہ (مرکز ) رقم نہیں دے ر

سلی گوڑی (مغربی بنگال)20 جنوری (سیاست ڈاٹ کام )چیف منسٹر مغربی بنگال ممتابنرجی نے آج مرکز پر الزام عائد کیا کہ وہ ریاستی حکومت کو مختلف مرکزی اسکیموں کے تحت جیسے جے این این یو آر این ،غذائی اجناس کی خریداری اور 100 روزہ کام کے پروگرام کیلئے فنڈس جاری کرنے سے انکار کررہا ہے ۔ ممتابنرجی نے کہا کہ یہ فنڈس ہمارا حق ہیں وہ (مرکز ) رقم نہیں دے رہا ہے ۔ وہ (بی جے پی قائدین) صرف ہم سے بد کلامی کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ خالی پیٹ گالیوں سے نہیں بھرتا ۔ممتابنرجی نے کہا کہ ہم راشن چاہتے ہیں بھاشن نہیں ۔ وہ ریاستی حکومت کے ایک پروگرام میں حاضرین سے خطاب کررہی تھی ۔ انہو ںنے کہا کہ متعلقہ ریاستیں اُن کی مالی کارروائی میں ناکام ہوچکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر آپ ریاست سے 40 ہزار کروڑ روپئے حاصل کرتے ہیں اور 8 ہزار کروڑ روپئے دیتے ہیں تو کیا یہ کہا جاسکتا ہے کہ مرکز رقم دے رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم اسے پسند نہیں کرتے یہ ہماری ریاست کا پیسہ ہے ۔ ممتابنرجی اتر بنگال اتسوکے افتتاحی اجلاس میں خطبہ افتتاحیہ دے رہی تھیں ۔ چیف منسٹر نے اظہار افسوس کیا کہ ریاستی حکومت کو اپنے مالیہ کے ایک بڑے حصہ سے محروم ہوجانے پر مجبور کیا جارہا ہے ۔ انہو ںنے کہا کہ قرضوں کی باز ادائیگی جو سابقہ حکومت نے حاصل کئے تھے ،موجودہ حکومت سے وصول کئے جارہے ہیں ۔ انہو ںنے کہا کہ ہم ملازمتوں کے مزید مواقع پیدا کرسکتے تھے اگر سی پی آئی ایم نے 35 سال تک انفراسٹرکچر تباہ نہ کیا ہوتا ۔ انہوں نے کہا کہ بنگال ان تمام منفی پہلووں اور پروپگنڈے کے باوجود ترقی کرے گا ۔ انہوں نے سیاسی پارٹیوں کو انتباہ دیا کہ وہ ترقی کی راہ میں بند کا اعلان کرتے ہوئے رکاوٹیں نہ پیدا کریں ۔ چیف منسٹر نے ادعا کیا کہ چند صحافتی گھرانے مسلسل ریاستی حکومت کے بارے میں منفی خبریں اور جھوٹی باتیں پھیلا رہے ہیں ۔ چیف منسٹر نے دعوی کیا کہ کنیا شری پرکلپا (ریاستی حکومت کا خصوصی پروگرام جس کے تحت طالبات کو یووا شری اسکیم کے تحت وظائف دیئے جاتے ہیں(۔یووا شری پروگرام کے تحت ماہانہ 1500 روپئے بطور امداد بیروزگار نوجوانوں کو دیئے جاتے ہیں اور یہ امداد اُس وقت تک جاری رہتی ہے جب تک کہ یہ نوجوان برسر روزگار نہ ہوجائیں ۔ انہو ںنے کہا کہ کاشتکاروں کو جو برقی ہل اور ٹریکٹرس استعمال کرتے ہیں انہیں بھی حکومت امداد دے رہی ہے ۔ انہو ںنے کہا کہ ہم نے شمالی بنگال کیلئے اسکولس اور کالجس اور تعلیمی ادارے قائم کئے ہیں ۔سینٹ زیویئر کالج جیسے تعلیمی ادارے کی شاخیں یہاں موجود ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ شمالی بنگال میں کئی صنعتیں قائم ہورہی ہیں ۔ ترقی کا یہ سفر جاری رہے گا ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ریاستی حکومت اسپورٹس انفراسٹرکچر کی ترقی کیلئے کلبوں کو بھی امداد فراہم کررہی ہے ۔ مغربی بنگال میں حال ہی میں منعقدہ بنگال گلوبل بزنس چوٹی کانفرنس کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ ریاست میں سرمایہ کاری کیلئے ایک اچھا موقع تھی ۔

TOPPOPULARRECENT