Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / مرکزی حکومت پر جنوبی ہند کی ریاستوں کو نظرانداز کرنے کا الزام

مرکزی حکومت پر جنوبی ہند کی ریاستوں کو نظرانداز کرنے کا الزام

تلنگانہ میں بی جے پی کی توسیع کا امکان نہیں‘ ریاستی وزیر کے ٹی آر کا قومی میڈیا چینل کو انٹرویو
حیدرآباد ۔ 9۔ اکتوبر (سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے مرکزی حکومت کی جانب سے جنوبی ہند کی ریاستوں کو نظر انداز کرنے کا الزام عائد کیا ۔ انہوں نے کہا کہ غیر این ڈی اے جماعتوں کی حکمرانی والی ریاستوں کو ترقی کے معاملہ میں نظر انداز کیا جارہا ہے ۔ کے ٹی آر نے شکایت کی کہ آندھراپردیش تنظیم جدید قانون میں تلنگانہ کیلئے جو تیقنات دیئے گئے تھے ، ان پر عمل آوری نہیں کی گئی ۔ کے ٹی آر نے ایک قومی میڈیا چیانل کو انٹرویو دیتے ہوئے تلنگانہ کو درپیش مسائل اور مرکزی حکومت کے رویہ کا تفصیل سے احاطہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ دہلی تا ممبئی صنعتی راہداری پر مرکزی حکومت نے خاص توجہ مرکوز کی ہے جبکہ جنوبی ہند میں حیدرآباد ، بنگلور اور چینائی علاقوں میں صنعتی راہداری کے قیام پر کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کو دہلی ، ممبئی صنعتی راہداری سے آگے بڑھ کر دیگر ریاستوں کے بارے میں بھی سوچنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ دہلی۔ ممبئی راہداری پر ہی مرکز نے بلٹ ٹرین کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی ترقی میں جنوبی ہند کی ریاستوں کے رول کو نظرانداز نہیں کیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر مرکزی حکومت اپنے رویہ میں تبدیلی نہیں لائے گی تو وہ چیف منسٹر کے چندر شیکھرراؤ کو دیگر جنوبی ریاستوں کی حکومتوں سے اس مسئلہ پر بات چیت کرنے کا مشورہ دیں گے۔ ریاست کی تقسیم کے وقت تلنگانہ سے جو وعدے کئے گئے تھے ، مرکزی حکومت نے ان کی تکمیل نہیں کی ہے ۔ آندھراپردیش میں پولاورم پراجکٹ کو قومی پراجکٹ کا درجہ دیا گیا ۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کئی مرتبہ مرکزی حکومت سے تلنگانہ کے مسائل پر نمائندگی کی لیکن عمل آوری میں مرکز کا رویہ حوصلہ افزاء نہیں ہے ۔ مرکزی وزیر فینانس نے تلنگانہ میں ایمس کے قیام کا اعلان کیا لیکن آج تک اسے عملی شکل نہیں دی گئی ہے۔ جنوبی ریاستوں میں بی جے پی کی توسیع سے متعلق منصوبہ کے بارے میں پوچھے جانے پر کے ٹی آر نے کہا کہ تلنگانہ نے بی جے پی کی توسیع کے کوئی امکانات نہیں ہے۔ اگر بی جے پی قائدین اس سلسلہ میں کوئی خواب دیکھ رہے ہیں تو انہیں اعتراض نہیں۔ تلنگانہ میں صرف اور صرف ٹی آر ایس عوام کیلئے قابل قبول ہے اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کیلئے کوئی جگہ نہیں۔ کے سی آر کی قیادت میں ٹی آر ایس نے اپنی کارکردگی کے ذریعہ عوام کے دلوں میں جگہ بنالی ہے۔

TOPPOPULARRECENT