مرکزی حکومت کاہر ایک کی ترقی کیلئے کام کرنے کا تیقن

نئی دہلی 10 جون ( سیاست ڈاٹ کام) آئندہ 60 ماہ کیلئے ’’مثبت اور تعمیری‘‘نظام کے قیام کا تیقن دیتے ہوئے بی جے پی زیر قیادت این ڈی اے نے آج کہا کہ وہ ہر شخص کو ملک کی ترقی اور پیشرفت میں ساتھ لیکر چلے گی۔ برسر اقتدار بی جے پی نے تیقن دیا کہ قومی فورموں جیسے قومی ترقیاتی کونسل اور قومی یکجہتی کونسل میں نئی جان ڈالنے کی کوشش کی جائے گی تا کہ

نئی دہلی 10 جون ( سیاست ڈاٹ کام) آئندہ 60 ماہ کیلئے ’’مثبت اور تعمیری‘‘نظام کے قیام کا تیقن دیتے ہوئے بی جے پی زیر قیادت این ڈی اے نے آج کہا کہ وہ ہر شخص کو ملک کی ترقی اور پیشرفت میں ساتھ لیکر چلے گی۔ برسر اقتدار بی جے پی نے تیقن دیا کہ قومی فورموں جیسے قومی ترقیاتی کونسل اور قومی یکجہتی کونسل میں نئی جان ڈالنے کی کوشش کی جائے گی تا کہ انہیں ’’زیادہ بہ معنی‘‘ بنایا جائے۔ ریاستوں کو ان فورموں پر اپنے اندیشے موثر انداز میں ظاہر کرنے کا موقف حاصل رہے گا۔ بی جے پی قائد مختار عباس نقوی نے صدر جمہوریہ کے خطاب پر تحریک تشکر پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب کا ساتھ ،سب کا ویکاس کی بات کرتے ہیں۔ بعض گوشوں کی جانب سے قطعی اکثریت حاصل کرنے کے رجحان کو مسترد کرتے ہوئے کہا گیا کہ بی جے پی کی کامیابی ’’منفی ووٹ ‘‘کا نتیجہ ہے ۔

مختار عباس نقوی نے کہا کہ یہ الزام بے بنیاد ہے این ڈی اے کو حالیہ لوک سبھا انتخابات میں واضح اکثریت حاصل ہوچکی ہے اور نریندر مودی کی زیر قیادت حکومت تشکیل دینے کیلئے عوام نے اسے واضح اکثریت عطا کی ہے ۔ مختار عباس نقوی نے کہا کہ گذشتہ انتخابات ماضی کے انتخابات کی بہ نسبت مختلف ہیں جو کہ کشمیر سے کنیا کماری تک عوام نے اُن کی پارٹی کو منتخب کیا ہے ۔ شمال مشرقی ہند کی ریاستوں میں بھی پارٹی کو عوام کی تائید حاصل ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے پاس ’’نوٹا‘‘کا متبادل موجود تھا لیکن انہوں نے اس کا استعمال نہیں کیا بلکہ بی جے پی کی تائید میں ووٹ دیا۔ ان افراد پر جو سیکولرزم کے نام پر ووٹ مانگتے ہیں ان پر تنقید کرتے ہوئے نقوی نے کہا کہ بی جے پی نے گذشتہ یو پی اے حکومت کے دوران اقلیتی غالب آبادی والے اضلاع کی حیثیت سے تسلیم شدہ 90 اضلاع سے 73 اضلاع میں کامیابی حاصل کی ۔

انہوں نے کہا کہ یہ صرف آغاز ہے ۔ بی جے پی نتائج پیش کرے گی حکومت چاہتی ہے کہ ملک کا وفاقی ڈھانچہ مستحکم کیا جائے ۔ انہوں نے اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں ایسا ماحول پایا جاتا ہے جہاں ’’ہر مسلمان‘‘ داڑھی اور ٹوپی کے ساتھ ’’دہشت گردی کی علامت‘‘ بن گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت ’’ہر چیز درست کردے گی‘‘۔بی جے پی قائد نے کہا کہ حکومت ملک سے دہشت گردی کا صفایا کرنے کی پابند ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت غریبوں اور پسماندہ طبقات کیلئے کام کرے گی اور اس بات کو یقینی بنائے گی کہ قطار کے آخری شخص تک بھی ترقی کے فوائد پہنچے ۔ بی جے پی کے جے پی نڈانے تحریک تشکر کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان نے ایک موثر قائد اور نریندر مودی کی حکمرانی کی تائید میں ووٹ دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT