Wednesday , July 18 2018
Home / شہر کی خبریں / مرکزی حکومت کیخلاف تلگودیشم کی تحریک عدم اعتماد پر دیگر جماعتوں کی تائید

مرکزی حکومت کیخلاف تلگودیشم کی تحریک عدم اعتماد پر دیگر جماعتوں کی تائید

وائی ایس آر کانگریس کی تحریک پر کسی کو بھی اعتماد نہیں، چندرا بابو نائیڈو

حیدرآباد ۔ 17 مارچ (سیاست نیوز) قومی صدر تلگودیشم پارٹی و چیف منسٹر آندھراپردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ مرکزی حکومت کے خلاف تلگودیشم پارٹی کی پیش کردہ تحریک عدم اعتماد کی کئی سیاسی جماعتوں نے بھرپور تائید و حمایت کا اظہار کیا ہے اور صرف اندرون ایک گھنٹہ میں ہی بڑے پیمانے پر مثبت ردعمل کا حاصل ہونا قومی سطح پر تلگودیشم پارٹی پر پائے جانے والے اعتماد و بھروسہ کا شاندار ثبوت ہے۔ آج صبح ارکان پارلیمان تلگودیشم پارٹی اور اسمبلی کی حکمت عملی کمیٹی قائدین کے ساتھ ٹیلی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ پی ایم او (دفتر وزیراعظم) کے اطراف چکر کاٹنے والے ملزم نمبر (2) و قائد وائی ایس آر کانگریس پارٹی کی جانب سے تحریک عدم اعتماد پیش کرنے کا اظہار کرنے پر کسی نے بھی بھروسہ نہیں کیا۔ انہوں نے وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کیسیس کو معاف کروانے کیلئے ہی مسٹر وجئے سائی ریڈی رکن پارلیمانی وائی ایس آر کانگریس پارٹی پرائم منسٹر آفس کے چکر کاٹ رہے ہیں۔ چیف منسٹر نے کانگریس پارٹی کے رکن پارلیمان کو ہدف ملامت بناتے ہوئے کہا کہ مرکز میں پائے جانے والے اہم عہدوں پر فائز شخصیتوں کے پیر پڑھ کر اپنے کیسیس کو معاف کروانے کی کوشش میں مصروف دکھائی دیتے ہیں۔ چندرا بابو نے مرکزی حکومت سے دریافت کیا کہ آیا اب بھی جگن کے کیسیس میں نرمی کیوں برتی جارہی ہے۔ جگن موہن ریڈی کے تمام خاص افراد وزیراعظم کے دفتر میں ہی کیوں رہ رہے ہیں۔ چیف منسٹر نے مزید کہاکہ آج کل میں ہی وائی ایس جگن موہن ریڈی کے خلاف جاری کیسیس سے دستبرداری اختیار کرلینے یا کیسیس کو ختم کردیئے جانے کی اطلاعات ہیں جبکہ حقیقت تو یہ ہیکہ ریاستی عوام مرکزی حکومت کے کسی بھی امکانی اقدامات پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں اور جگن موہن ریڈی کے کیسیس سے متعلق مرکزی حکومت نے کسی بھی امکانی اقدامات پر ریاست کے عوام میں مرکزی حکومت اور وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو بہتر سبق سکھانے کا سخت انتباہ دیا۔ چیف منسٹر مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے دریافت کیا کہ جگن موہن ریڈی اور مرکزی حکومت سے سوال نہ کرکے پون کلیان مجھ کو تنقید کا نشانہ بنانا یہ بات ان کے سمجھ کے باہر ہے۔ ملک کی تمام نظریں آندھراپردیش پر ہی لگی ہوئی رہنے کا اظہار کرنے والے مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ قومی سطح پر آندھراپردیش کے عوام کی آواز سنوائی گئی۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ انہیں سیاست نہیں چاہئے بلکہ مرکزی حکومت سے ریاست کے ساتھ انصاف کروانا ہی ان کا اہم مقصد ہے۔

TOPPOPULARRECENT