Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / مرکزی حکومت کی پری میٹرک ، پوسٹ میٹرک اسکالر شپس

مرکزی حکومت کی پری میٹرک ، پوسٹ میٹرک اسکالر شپس

مداخلت کرنے نجمہ ہبت اللہ سے اولیائے طلبہ کی اپیل ، ویب سائٹ کے بناء خلل کام کو یقینی بنانے پر زور
حیدرآباد ۔ 11 ۔ اگست : ( نمائندہ خصوصی ) : حکومتیں مسلم اقلیت کے لیے مختلف اسکیمات تو شروع کردیتی ہیں لیکن ان اسکیمات پر عمل آوری میں رکاوٹیں بھی کھڑی کی جاتی ہیں ۔ چنانچہ اقلیتی بہبود کے لیے مختص بجٹ کسی سال بھی مکمل طور پر صرف نہیں کیا جاتا ۔ اس کے لیے عہدیداروں کا تساہل حکمرانوں کا تعصب اور خود ہماری اپنی غفلت ذمہ دار ہے ۔ مرکزی و ریاستی حکومتوں کی اسکیمات اور پروگرامس کی بات آتی ہے تو آج ہم ذکر کرتے ہیں مرکزی حکومت کی پوسٹ اور پری میٹرک اسکالر شپس کا ان اسکالر شپس کے لیے آن لائن ادخال کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے ۔ سیاست کے زیر اہتمام طلباء وطالبات کی درخواستوں کا مفت آن لائن ادخال عمل میں لایا جارہا ہے لیکن مرکزی وزارت اقلیتی امور کی غفلت کے نتیجہ میں درخواستوں کے آن لائن ادخال کی جو ویب سائٹ ہے وہ چار پانچ دنوں سے بند پڑی ہے جس کے باعث طلباء و اولیائے طلبہ کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ حکومت نے درخواستوں کے ادخال کی آخری تاریخ 31 اگست مقرر کی ہے ۔ دن تیزی سے گذر رہے ہیں ویب سائٹ غیر کارکرد رہنے کے نتیجہ میں سیاست ہیلپ ڈیسک اور دوسرے مقامات پر طلباء و اولیائے طلبہ کا ہجوم دیکھا جارہا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ دن میں کچھ دیر ویب سائٹ کام کرتی ہے اور پھر اسے کسی غلطی کا بہانہ بناکر بند بتایا جاتا ہے ۔ بعض اولیائے طلبہ نے راقم الحروف سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ ان لوگوں نے حج ہاوز پہنچ کر محکمہ اقلیتی بہبود کے اعلیٰ عہدہ داروں کو توجہ دلائی ہے لیکن ان عہدہ داروں کا کہنا ہے کہ اس ضمن میں وہ کچھ نہیں کرسکتے یہ کام مرکزی وزارت اقلیتی امور کا ہے ۔ بہر حال اولیائے طلباء نے مرکزی وزیر اقلیتی امور محترمہ نجمہ ہبت اللہ سے درخواست کی ہے کہ وہ اس جانب توجہ دے کر وزارت کے متعلقہ محکمہ کو اس بات کا پابند کریں کہ ویب سائٹ بنا کسی رکاوٹ کے مسلسل کام کرتی رہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT