Friday , November 24 2017
Home / ہندوستان / مرکزی ملازمین کا فیملی پلاننگ الاؤنس برخاست

مرکزی ملازمین کا فیملی پلاننگ الاؤنس برخاست

کابینی سکریٹری مہمان نوازی بھتہ سے محروم ، آخری رسومات الاؤنس میں اضافہ
نئی دہلی ۔10جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی حکومت کے ملازمین کو اب فیملی پلاننگ الاؤنس نہیں ملے گا اور کابینی سکریٹری بھی اپنے ماہانہ مہمان نوازی و تفریحی بھتہ سے محروم ہوجائیں گے ۔علاوہ زیں بعض منتخب زمروں کے ملازمین کے ’’غذائی ‘‘ ، ’’ہیرکٹنگ‘‘ اور ’’سوپ ٹائیلٹ‘‘ الاؤنس بھی بند ہوجائیں گے ۔فینانس سکرٹری اشوک لاوان کی قیادت میں کمیٹی برائے الاؤننس کی متعدد سفارشات سے حکومت اتفاق کرچکی ہے جس کے مطابق مختلف بھتوں کو ختم کردیا گیا ہے اور بعض پر نظرثانی کی گئی ہے ۔ آخری رسومات اور سیکل الاؤنس کو نظرثانی کے ساتھ برقرار رکھا گیا ہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی کی صدارت میں 28 جون کو منعقدہ کابینی اجلاس میں الاؤنسیس پر نظرثانی کے فیصلہ کو منظوری دی گئی تھی اور 6 جولائی کو رسمی احکام جاری کئے گئے تھے ۔ کمیٹی برائے الاؤنسیس نے پے کمیشن کی رپورٹ کا حوالہ دیا جس نے مختلف زمروں کے مرکزی ملازمین کو دیئے جانے والے 196 الاؤنسیس کا جائزہ لیا تھا ۔ اس کمیٹی نے 27 اپریل کو اپنی رپورٹ پیش کی تھی اور حکومت نے 34 ترمیمات کے ساتھ اس کی سفارشات کو قبول کرنے کا فیصلہ کیا تھا ۔ ایک عہدیدار نے تفصیلات بیان کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے اعلیٰ ترین سرکاری عہدیدار کابینی سکریٹری کو مختلف مہمانوں کی ضیافت کے لئے دیا جانیوالا 10,000 روپئے کا ماہانہ الاؤنس بھی برخاست کردیا گیا ہے ۔ کابینی سکریٹریٹ میں کام کرنے والے افسران کو دیا جانے والا ’’خفیہ رازدارانہ الاؤنسس ‘‘ بھی برخاست کردیا گیا ہے۔ خفیہ دستاویزات سے نمٹنے اور حساس و نازک نوعیت کی خدمات انجام دینے والے افسران کو یہ الاؤنس دیا جاتا تھا ۔ اس ادارہ نے یہ کہتے ہوئے فیملی پلاننگ الاؤنسس ختم کرنے کی سفارش کی تھی کہ ملک کو اب فیملی پلاننگ کی ضرورت نہیں ہے ۔ پے کمیشن نے اپنی رپورٹ میں کہا تھا کہ سیکل اور سیکل الاؤنس اب ازکار رفتہ ہوگئے ہیں جن کی ضرورت باقی نہیں رہی لیکن حکومت نے محکمہ ڈاک اور ریلویز میں اس الاؤنس کو نہ صرف برقرار رکھا بلکہ دوگنا کرتے ہوئے 180 روپئے ماہانہ مقرر کیا ہے ۔ آخری رسومات کا بھتہ جو 6000 روپئے تھا لیکن سفارشات میں کہا گیا ہے کہ پے کمیشنوں کی طرف سے تنخواہوں میں مسلسل اضافہ کے سبب اب یہ الاؤنس اپنی اہمیت و افادیت سے محروم ہوگیا ہے لیکن حکومت نے اس پر نظرثانی کرتے ہوئے اضافہ کے ساتھ 9000 روپئے مقرر کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT