Sunday , June 24 2018
Home / ہندوستان / مرکزی ملازمین کے اثاثہ جات کا کیس

مرکزی ملازمین کے اثاثہ جات کا کیس

نئی دہلی 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی حکومت کے ملازمین کو مزید 4 ماہ کی مہلت دی گئی ہے اور اُنھیں آئندہ سال اپریل تک اپنے اثاثہ جات کی تفصیلات داخل کرنے کی اجازت دی گئی۔ لوک پال قواعد کے مطابق تمام سرکاری مرکزی ملازمین کو اپنے اثاثہ جات اور دیگر جائیدادوں کی تفصیلات پیش کرنی ہے۔ اِن تفصیلات کی فراہمی کے لئے اِنھیں فارمس دیئے جائیں

نئی دہلی 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی حکومت کے ملازمین کو مزید 4 ماہ کی مہلت دی گئی ہے اور اُنھیں آئندہ سال اپریل تک اپنے اثاثہ جات کی تفصیلات داخل کرنے کی اجازت دی گئی۔ لوک پال قواعد کے مطابق تمام سرکاری مرکزی ملازمین کو اپنے اثاثہ جات اور دیگر جائیدادوں کی تفصیلات پیش کرنی ہے۔ اِن تفصیلات کی فراہمی کے لئے اِنھیں فارمس دیئے جائیں گے جس میں مرکز کی نظرثانی شدہ پالیسی کے مطابق خانہ پُری کی جانی چاہئے۔ محکمہ پرسونل اینڈ ٹریننگ نے آج اِس تاریخ میں توسیع کی ہے اور 30 اپریل 2015 ء تک تمام مرکزی ملازمین اثاثہ جات کی تفصیلات داخل کرسکتے ہیں۔ منقولہ اور غیر منقولہ جائیدادوں سے متعلق تفصیلات داخل کرنے کے لئے ایک مقررہ فارم تیار کیا گیا ہے۔ حکومت نے یہ اقدام بعض بیوروکریٹس کی جانب سے اپنے اثاثہ جات کی تفصیل پیش کرنے میں تشویش ظاہر کرنے پر اِس پر نظرثانی بھی کی ہے کیونکہ عہدیداروں کے علاوہ اِن کے ارکان خاندان بھی عوامی اثاثہ جات کی ملکیت کا حصہ ہوتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT