Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / مرکزی وزیر اقلیتی امور نجمہ ہبت اللہ کا ڈئرکٹر محمد جلال الدین اکبر کو تیقن

مرکزی وزیر اقلیتی امور نجمہ ہبت اللہ کا ڈئرکٹر محمد جلال الدین اکبر کو تیقن

حیدرآباد۔/18اگسٹ، ( سیاست نیوز) مرکزی وزیر اقلیتی اُمور نجمہ ہپت اللہ نے تیقن دیا کہ وقف بورڈکی تقسیم کا عمل اندرون ایک ماہ مکمل کرلیا جائے گا۔ سنٹرل وقف کونسل کے نئی دہلی میں منعقدہ آج کے اجلاس میں نجمہ ہپت اللہ نے وقف بورڈ کی تقسیم اور تلنگانہ میں اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر عمل آوری کے سلسلہ میں ڈائرکٹر اقلیتی بہبود محمد جلال الدین اکبر سے بات چیت کی۔ڈائرکٹر اقلیتی بہبود نے وقف بورڈکی عدم تقسیم کے باعث اوقافی جائیدادوں کے تحفظ اور دیگر اُمور میں حائل دشواریوں کا حوالہ دیا۔ متعلقہ عہدیداروں سے بات چیت کے بعد مرکزی وزیر نے کہا کہ اندرون ایک ماہ وقف بورڈکی تقسیم کا اعلامیہ جاری کردیا جائیگا۔ انہوں نے اقلیتی بہبود کی اسکیمات اور خاص طور پر تعلیمی ترقی سے متعلق اُمور میں تلنگانہ حکومت سے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ نجمہ ہپت اللہ نے تلنگانہ میں مرکزی اسکیمات پر عمل آوری کی رفتار پر اطمینان کا اظہارکیا۔ انہوں نے ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کو مشورہ دیا کہ مرکز کی اسکیمات نئی منزل، نئی روشنی اور ہماری دھرور سے زیادہ سے زیادہ استفادہ کیا جائے۔ نجمہ ہپت اللہ نے اوقافی جائیدادوں کی ترقی کیلئے مرکز سے فنڈز کی فراہمی کا بھی تیقن دیا۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے ذریعہ ان سے حاصل ہونے والی آمدنی اقلیتوں کی بھلائی پر خرچ کی جاسکتی ہے۔ ہماری دھرور اسکیم کے تحت دائرۃ المعارف کی عظمت رفتہ بحال کرنے کیلئے مرکز نے 34کروڑ روپئے کی منظوری سے اتفاق کیا ہے۔ دائرۃ المعارف کی ترقی اور وہاں موجود علمی ذخیرے کے تحفظ کے سلسلہ میں جلال الدین اکبر نے مرکزی وزارت اقلیتی اُمور کو رپورٹ روانہ کی تھی جسے منظوری دے دی گئی۔ بتایا جاتا ہے کہ اندرون ایک ہفتہ مرکزی حکومت 34کروڑ روپئے کی امداد جاری کردے گی۔ اس اسکیم کے تحت اس قدر بڑے پراجکٹ کے حصول کا اعزاز تلنگانہ کو جاتا ہے اور اس سلسلہ میں ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کی مساعی کا اہم دخل ہے۔ ڈاکٹر نجمہ ہپت اللہ نے اقلیتی طلبہ کیلئے مرکزی حکومت کی پری میٹرک اسکالر شپ کی درخواستوں کے ادخال میں حائل دشواریوں کو دور کرنے کیلئے محکمہ کے عہدیداروں کو ہدایت دی۔ جاریہ سال ویب سائٹ میں فنی خرابی کے سبب طلبہ کو اسکالر شپ کے فارمس داخل کرنے میں دشواریوں کا سامنا ہے۔ ملک بھر سے مرکزی حکومت کو اس سلسلہ میں شکایات وصول ہوئی ہیں۔ جلال الدین اکبر نے مرکزی وزیر کو دوسرے اوقافی سروے اور اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے وقف بورڈ کی جانب سے کئے جارہے اقدامات کے بارے میں تفصیلی رپورٹ پیش کی۔ اجلاس میں جوائنٹ سکریٹری اقلیتی اُمور راکیش موہن کے علاوہ دیگر ریاستوں سے تعلق رکھنے والے سنٹرل وقف کونسل کے ارکان نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT