Monday , November 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مرکزی وزیر دتاتریہ کے خلاف بھینسہ میں احتجاجی مظاہرہ

مرکزی وزیر دتاتریہ کے خلاف بھینسہ میں احتجاجی مظاہرہ

بھینسہ ۔ 21 ۔ جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) دلت اسکالر روہت کی خودکشی پر بھینسہ شہر میں دلت طبقے ، ایم آر پی ایس اور سی آئی ٹی یو کی جانب سے بی جے پی مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ منظم کیا گیا ۔ بھینسہ شہر کے بس اسٹانڈ کے روبرو موجود امبیڈکر مجسمہ سے ایک ریالی نکالتے ہوئے مرکزی وزیر دتاتریہ کے خلاف بس اسٹانڈ کے قریب راستہ روک کر دھرنا منظم کیا اور دلت طبقے کے صدر سائیلو اور بھیم راؤ ڈونگرے نے حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ دتاتریہ دلت اسکالر روہت کا قاتل ہے ۔ اس قاتل کو سخت سے سخت سزاء دی جائے ۔ دھرنے کے دوران مرکزی وزیر دتاتریہ کا علامتی پتلہ نذر آتش کرتے ہوئے مرکزی وزیر کے مخالف نعرے بازی کی گئی ۔ اس دھرنے کی وجہ سے شہر کی مصروف ترین شاہراہ پر دونوں جانب گاڑیوں کی قطاریں دیکھی گئیں ۔ بعدازاں یہ ریالی بھینسہ تحصیل آفس پہنچی اور اس ضمن میں بھینسہ تحصیلدار رام موہن کو ایک یادداشت پیش کی گئی ۔ اس ریالی میں سی آئی ٹی یو کارکن مہیش کے علاوہ دلت طبقے کے افراد موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT