Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو کی تمام تر توجہ آندھرا پردیش کی ترقی پر مرکوز، تلنگانہ کے ساتھ نا انصافی ، ٹی آر ایس ایم پی جتیندر ریڈی کا الزام

مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو کی تمام تر توجہ آندھرا پردیش کی ترقی پر مرکوز، تلنگانہ کے ساتھ نا انصافی ، ٹی آر ایس ایم پی جتیندر ریڈی کا الزام

حیدرآباد۔/28اگسٹ، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ جتیندر ریڈی نے الزام عائد کیا کہ مرکزی وزیر شہری ترقیات وینکیا نائیڈو مرکزی وزیر سے زیادہ آندھرا پردیش کے نمائندہ کی حیثیت سے کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر کی ساری توجہ آندھرا پردیش ریاست کی ترقی پر ہے جبکہ تلنگانہ کے ساتھ ان کا رویہ ناانصافی پر مبنی ہے۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے جتیندر ریڈی نے وینکیا نائیڈو کی جانب سے نیتی آیوگ کے عہدیداروں کو اپنی قیامگاہ پر طلب کرتے ہوئے ہدایات جاری کرنے پر شدید ردعمل کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ نیتی آیوگ کے عہدیداروں کو قیامگاہ طلب کرکے آندھرا پردیش کے مسائل پر بات چیت کرنا اس بات کو ظاہر کرتا ہے کہ وینکیا نائیڈو آندھرا پردیش کے نمائندہ کی حیثیت سے کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ تمام ریاستوں کے ساتھ یکساں سلوک کریں لیکن وینکیا نائیڈو کا جانبدارانہ رویہ برقرار ہے۔ جتیندر ریڈی نے اسمارٹ سٹیز کے انتخاب اور دیگر اُمور میں تلنگانہ کے ساتھ ناانصافی پر برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ تلنگانہ کے خلاف آندھرا پردیش کو مرکز سے زائد فنڈز کی اجرائی کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ  تلنگانہ ریاست گزشتہ 60برسوں سے پسماندگی کا شکار ہے جس کے لئے آندھرائی قائدین ذمہ دار ہیں، چندر شیکھر راؤ نے اس ناانصافی کے خلاف مسلسل جدوجہد کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وینکیا نائیڈو تلنگانہ کے ساتھ کی گئی ناانصافیوں کو بھلاکر آندھرا پردیش کی تائید کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تنظیم جدید قانون میں تلنگانہ کے ساتھ جو وعدے کئے گئے تھے ان پر عمل کیا جانا چاہیئے۔ جتیندر ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ سے کئے گئے وعدوں پر عمل آوری کیلئے تلنگانہ حکومت جلد ہی وزیراعظم نریندر مودی اور نیتی آیوگ کے نائب صدرنشین سے نمائندگی کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT