Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / مرکزی گنیش جلوس کا پُرامن اختتام

مرکزی گنیش جلوس کا پُرامن اختتام

حسین ساگر جھیل میں ہزاروں مورتیوں کا نمرجن‘ پولیس اور بلدیہ کا وسیع تر بندوبست

حسین ساگر جھیل میں ہزاروں مورتیوں کا نمرجن‘ پولیس اور بلدیہ کا وسیع تر بندوبست

حیدرآباد ۔ 8 ستمبر (سیاست نیوز) شہر حیدرآباد میں 10 دن سے جاری گنیش تہوار کا آج پرامن طور پر اختتام عمل میں آیا اور مرکزی گنیش جلوس بغیر کسیناخوشگوار واقعہ کے مکمل ہوگیا، جس سے دونوں شہروں کے عوام نے سکون کی سانس لی۔ گنیش جلوس کا آج صبح تاخیر سے آغاز ہوا، جس میں 15 لاکھ بھکتوں نے جوش و خروش سے 60 ہزار گنیش مورتیوں کا وسرجن کیا اور ٹینک بینڈ پر نمرجنکیلئے 40 کیرین کی خدمات حاصل کی گئی۔ مرکزی جلوس رات دیر گئے تک جاری تھا اور بالاپور گنیش جلوس کا تاخیر سے آغاز ہونے کے باعث پرانے شہر سے گنیش مورتیوں کینمرجن میں دشواریاں پیش آئیں۔ مرکزی گنیش جلوس پرانے شہر کے حساس علاقوں سے گذرتا ہوا آج رات حسین ساگر کے قریب اختتام کو پہنچا۔ پولیس نے اس موقع پر سیکوریٹی کے وسیع ترین انتظام کئے تھے اور آج صبح ڈائرکٹر جنرل پولیس تلنگانہ مسٹر انوراگ شرما نے وزیرداخلہ مسٹر نائنی نرسمہا ریڈی کے ہمراہ پرانے شہر کا دورہ کیا اور وہاں کے حالات کا جائزہ لیا۔ دونوں شہروں کی سب میں بڑی گنیش کی مورتی جو خیرت آباد میں نصب کی گئی تھی، اسے آج رات دیر گئے ایک بڑے کرین کے ذریعہ شوبھایاترا کی شکل میں حسین ساگر جھیل میں وسرجن کردیا گیا۔ کمشنر پولیس حیدرآباد مسٹر مہندر ریڈی نے ڈائرکٹر جنرل پولیس مسٹر انوراگ شرما اور کمشنر جی ایچ ایم سی مسٹر سومیش کمار کے ہمراہ ہیلی کاپٹر کے ذریعہ حسین ساگر جھیل اور پرانے شہر میں جاری مرکزی گنیش جلوس کا وقفہ وقفہ سے جائزہ لیا اور اپنے ماتحتوں کو جلوس میں تیزی پیدا کرنے کی ہدایت دی۔ مرکزی گنیش جلوس کے موقع پر حیدرآباد واٹر ورکس کی جانب سے گنیش بھکتوں کیلئے مؤثر پانی کا انتظام کیا گیا تھا اور سرکاری طبی عملہ بھی عوامی خدمت کیلئے موجود تھا۔ گنیش مورتیوں کے استقبال کیلئے شہر کے مختلف علاقوں میں استقبالیہ ڈائس بنائے گئے تھے، جس کے ذریعہ جلوس میں موجود بھکتوں کا جوش و خروش سے استقبال کیا گیا۔ پولیس نے وسرجن کے موقع پر 10 ہزار سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے تھے اور خفیہ ویڈیو گرافی کے ذریعہ جلوس پر مکمل طور پر نظر رکھے ہوئے تھے۔ کمشنر پولیس اور دیگر اعلیٰ عہدیداروں نے مرکزی گنیش جلوس کا سٹی پولیس کمانڈ اینڈ کنٹرول جس میں سی سی ٹی وی موجود ہے، سے جائزہ لیا۔ حسین ساگر جھیل کے علاوہ سائبرآباد کے سرورنگر تالاب میں بھی سینکڑوں گنیش مورتیوں کا وسرجن عمل میں آیا۔ جلوس کا مشاہدہ کرنے کیلئے پہنچنے والے سینکڑوں افراد کے درمیان آج ٹینک بینڈ کے قریب 32 کمسن بچے لاپتہ ہوگئے اور بعدازاں بعض کمسن دستیاب ہونے پر چائلڈ پروٹیکشن یونٹ نے ان کے والدین کا پتہ لگا کر ان کے حوالے کردیا۔تاخیر سے آغاز ہونے والے مرکزی گنیش جلوس کل دوپہر تک جاری رہنے کی توقع ہے۔

TOPPOPULARRECENT