Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / مرکز ‘ عوامی منتخبہ حکومتوں کو عدم استحکام کا شکار کرنے میں مصروف

مرکز ‘ عوامی منتخبہ حکومتوں کو عدم استحکام کا شکار کرنے میں مصروف

لوک سبھا میں کانگریس کا الزام ۔ جس کشتی میں سوراخ ہو وہ ضرور ڈوبتی ہے :راج ناتھ سنگھ
نئی دہلی 19 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) اروناچل پردیش کے تعلق سے سپریم کورٹ کے فیصلے سے حوصلہ مند کانگریس نے آج لوک سبھا میں حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا اور الزام عائد کیا کہ وہ ریاستوں میں پارٹی کی حکومتوں کو عدم استحکام کا شکار کر رہی ہے ۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے اس الزام کی تردید کی ۔ کانگریس نے ایوان سے واک آوٹ بھی کیا جبکہ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ اروناچل پردیش اور اترکھنڈ میں متنازعہ تبدیلیوں کیلئے کانگریس کا داخلی بحران ذمہ دار تھا ۔ انہوں نے ریمارک کیا کہ اگر کسی کشتی میں سوراخ ہو تو وہ ضرور ڈوبتی ہے ۔ یہ مسئلہ ایوان میں کانگریس کے لیڈر ملکارجن ھرگے نے اٹھایا جنہوں نے کہا کہ ایک جانب مودی حکومت ڈاکٹر امبیڈکر کی پیدائش کے 125 سال کی تقاریب منا رہی ہے اور دوسری جانب وہ عوامی منتخبہ حکومتوں کو بیدخل کرتے ہوئے جمہوریت کا قتل کر رہی ہے ۔ کھرگے نے کہا کہ مرکز نے ’ کانگریس ۔ مکت ‘ ہندوستان کے اپنے نعرہ کو بہرقیمت عملی شکل دینی شروع کردی ہے ۔ جہاں کہیں کوموقع مل رہا ہے مرکز ‘ ریاستی حکومتوں کو عدم استحکام کا شکار کر رہی ہے

 

اور ان کی جگہ اپنی پارٹی کی حکومتیں قائم کر رہی ہے ۔ مرکز نے ایسا اتر کھنڈ اور اروناچل پردیش میں کیا اور ایسی کوششیں منی پور اور ہماچل پردیش میں بھی کی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ ایسا کرناعوام اور دستور کسی کیلئے بھی اچھا نہیں ہے ۔ انہوں نے وقفہ صفر کے دوران کہا کہ ہم سپریم کورٹ کے شکر گذار ہیں کہ اس نییہاں دستور کی بالادستی کو یقینی بنایا ہے ۔ اسکے احکام تاریخی ہیں اور سنہری حرفوں میں لکھے جائیں گے ۔ آپ ( بی جے پی ) کے پاس عددی طاقت نہیں ہے لیکن پچھلے دروازے سے اقتدار حاصل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ کھرگے نے کہا کہ سپریم کورٹ نے حکومت کی سرزنش کی ہے اور امید ہے کہ حکومت آئندہ ایسا نہیں کریگی ۔ اس الزام کا جواب دیتے ہوئے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ اترکھنڈ اور اروناچل پردیش میں کانگریس حکومتوں کو خود اس کے ارکان اسمبلی نے زوال کا شکار کیا تھا ۔ انہوں نے تاہم سپریم کورٹ کے احکام کا کوئی ذکر نہیں کیا جن کے ذریعہ ان ریاستوں میں کانگریس حکومتوںکو بحال کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان معاملات سے بی جے پی کا کوئی تعلق نہیں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT