Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / مرکز نے ہمیں اندھیرے میں کیوں رکھا

مرکز نے ہمیں اندھیرے میں کیوں رکھا

مہلوک ہندوستانیوں کے سوگوار خاندانوں کا حکومت سے سوال
چندی گڑھ ۔ /20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) عراق میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ کے ہاتھوں 39 ہندوستانیوں کے قتل عام پر ان کے ارکان خاندان میں مرکز سے ایک ہی سوال پوچھا ہے کہ آخر انہیں اتنے دن تک اندھیرے میں کیوں رکھا گیا ۔ مہلوک افراد کے گھروں پر دلسوز مناظر دیکھے تھے جبکہ سوگوار ارکان خاندان اپنے درد کا ٹی وی پر اظہار کررہے تھے ۔ وزیرخارجہ سشما سواراج نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ دولت اسلامیہ کے یرغمال تمام 39 ہندوستانی ہلاک ہوچکے ہیں اور ان کی نعشیں برآمد کی جاچکی ہیں ۔ مہلوک کارکنوں کے کئی رشتہ داروں نے کہا کہ انہیں سرکاری طور پر اپنے چہیتوں کے بارے میں حکومت کے کسی بھی محکمہ سے کوئی اطلاع نہیں دی گئی تھی ۔ مرکزی وزیر خارجہ سشما سواراج سے 11 تا 12 مرتبہ ملاقات کی گئی تھی اور انہوں نے ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ لاپتہ ہندوستانی ابھی زندہ ہیں اور واحد زندہ بچ جانے والا شخص ارجیت مسیح جھوٹا ہے ۔ پھر اچانک یہ کیا ہوگیا ۔ حکومت کو چاہئیے تھا کہ ہمیں لاپتہ ہندوستانیوں کے بارے میں کوئی اطلاع نہیں ملی ۔ کہتے ہمیں جھوٹے بیانات کے ذریعہ تسلی کیوں دی جاتی رہی ۔ اچانک ہماری امیدیں ٹوٹ گئیں ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT